اب نصراللہ گنج کا نام بدلنے کی تجویز

مدھیہ پردیش میں ماضی قریب میں چند مقامات کا نام تبدیل کرنے کے بعد اب ریاستی حکومت ایک اور ٹاؤن کا نام بدلنے کا منصوبہ رکھتی ہے جو چیف منسٹر شیوراج سنگھ چوہان کے حلقہ اسمبلی بدھنی میں واقع ہے۔

بھوپال: مدھیہ پردیش میں ماضی قریب میں چند مقامات کا نام تبدیل کرنے کے بعد اب ریاستی حکومت ایک اور ٹاؤن کا نام بدلنے کا منصوبہ رکھتی ہے جو چیف منسٹر شیوراج سنگھ چوہان کے حلقہ اسمبلی بدھنی میں واقع ہے۔

چوہان نے ریاستی دارالحکومت بھوپال سے تقریباً 90 کیلو میٹر دور واقع ٹاؤن میں اتوار کے دن کہا کہ نصراللہ گنج کا نام بدل کر بھیروندا کرنے کی تجویز مرکز کو بھیجی گئی ہے۔

اپوزیشن کانگریس نے چیف منسٹر پر فرقہ وارانہ ایجنڈہ کو آگے بڑھانے کا الزام عائد کیا جبکہ برسراقتدار بی جے پی کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت‘ ترقی پر توجہ دے رہی ہے۔ جاریہ سال فروری میں حکومت مدھیہ پردیش نے ضلع ہوشنگ آباد کا نام بدل کر نرمداپورم کردیا تھا۔

اس نے اسی ضلع کے ببائی ٹاؤن کا نیا نام ماکھن نگر رکھا تھا۔ ببائی مشہور شاعر ماکھن لال چترویدی کا مقام ِ پیدائش ہے۔ گزشتہ برس نومبر میں بھوپال کے حبیب گنج ریلوے اسٹیشن کا نام بدل کر رانی کملاپتی رکھا گیا تھا۔

کانگریس ترجمان کے کے مشرا نے کہا کہ جب ریاست کا سربراہ فرقہ وارانہ جذبات کو ہوا دے رہا ہو تو امن کیسے برقرار رہ سکتا ہے؟۔ چیف منسٹر کو ترقی کی بات کرنی چاہئے جو بی جے پی دور میں نہیں ہورہی ہے۔ کوئی نہیں جانتا کہ نام بدلنے کی اس دوڑ میں ریاست کہاں جارہی ہے؟۔

تبصرہ کریں

Back to top button