احمدنگر سیول ہاسپٹل میں مہیب آتشزدگی‘ 10 کورونا مریضوں کی موت

چیف منسٹر نے کہا کہ تحقیقات ضلع کلکٹر کریں گے اور حکومت کو رپورٹ دیں گے۔ احمد نگر سے آئی اے این ایس کے بموجب بھائی دوج کے دن احمد نگر سیول ہاسپٹل کے انٹینسیو کیر یونٹ (آئی سی یو) میں بھڑک اٹھی مہیب آگ نے کم ازکم 10مریضوں کی جان لے لی۔

پونے: مہاراشٹرا کے شہر احمد نگر کے ڈسٹرکٹ سیول ہاسپٹل کے آئی سی یو میں بھڑک اٹھی آگ میں کم ازکم 10 کورونا وائرس مریض ہلاک ہوئے جبکہ ایک مریض بڑی حد تک جھلس گیا۔ عہدیداروں نے یہ بات بتائی۔ آگ ہفتہ کے دن لگ بھگ 11 بجے انٹینسیو کیر یونٹ میں بھڑک اٹھی جہاں 20 کووِڈ مریض زیرعلاج تھے۔ احمد نگر‘ پونے سے لگ بھگ 120 کیلو میٹر دور واقع ہے۔ وہاں کے کلکٹر راجندر بھوسلے نے 10مریضوں کے مرنے کی توثیق کی۔

 انہوں نے کہا کہ ایک مریض کی حالت نازک ہے۔ احمد نگر میونسپل کارپوریشن کے چیف فائر آفیسر نے بتایا کہ آگ لگ بھگ 1:30 بجے دن بجھادی گئی۔ اس کے بعد کولنگ آپریشن کیا گیا۔ ایک پولیس عہدیدار نے بتایا کہ آگ لگنے کے بعد زخمی مریضوں کو قریبی ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں 10 کو داخلہ سے قبل مردہ قراردیا گیا۔ جاریہ سال اپریل میں مہاراشٹرا کے ضلع پال گھر کے ایک خانگی ہسپتال کے آئی سی یو میں آگ بھڑک اٹھنے سے 15 کووِڈ مریضوں کی جان گئی تھی۔

 مارچ میں ممبئی کے علاقہ بھانڈوپ کے ڈریمس مال میں بنے کووِڈ ہاسپٹل میں بھڑک اٹھی آگ نے 9 مریضوں کی جان لی تھی۔اسی دوران چیف منسٹر مہاراشٹرا اُدھو ٹھاکرے نے احمدنگر سیول ہاسپٹل میں آگ بھڑک اٹھنے کی گہرائی سے تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ انہوں نے ضلع کے نگراں وزیر حسن مشرف اور ریاستی چیف سکریٹری سیتارام کنٹے سے فون پر بات چیت کی اور ان سے کہا کہ وہ یہ یقینی بنائیں کہ دیگر مریضوں کا اچھی طرح علاج ہو۔

 چیف منسٹر نے کہا کہ تحقیقات ضلع کلکٹر کریں گے اور حکومت کو رپورٹ دیں گے۔ احمد نگر سے آئی اے این ایس کے بموجب بھائی دوج کے دن احمد نگر سیول ہاسپٹل کے انٹینسیو کیر یونٹ (آئی سی یو) میں بھڑک اٹھی مہیب آگ نے کم ازکم 10مریضوں کی جان لے لی۔ دیگر 7 مریض زخمی ہوئے۔ عہدیداروں نے یہ بات بتائی۔ ضلع کلکٹر ڈاکٹر رجندر بی بھوسلے نے میڈیا نمائندوں کو بتایا کہ آگ آج صبح لگ بھگ 10 بجے بھڑک اٹھی۔ آئی سی یو وارڈ میں زیرعلاج 17 مریضوں میں 10کی موت واقع ہوئی جبکہ مابقی زخمی ہوئے۔

 انہوں نے کہا کہ موت کی اصل وجہ کا پتہ چلانے نعشیں پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دی گئی ہیں۔ آگ بجھانے کے لئے کم ازکم 4 فائر ٹنڈرس طلب کئے گئے۔ احمد نگر پولیس کنٹرول کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ دوپہر لگ بھگ 1 بجے آگ پر قابو پالیا گیا۔ دواخانہ کے ملازمین نے مقامی لوگوں اور بچاؤ ٹیموں کی مدد سے دوسرے وارڈس کے مریضوں کو بطور احتیاط وہاں سے منتقل کردیا۔

 آگ لگنے کی خبر ملتے ہی مریضوں کے رشتہ دار اپنوں کا حال معلوم کرنے دواخانہ کی طرف دوڑ پڑے۔ آگ کی اصل وجہ معلوم نہیں لیکن ابتدائی تحقیقات میں شارٹ سرکٹ کی نشاندہی ہوئی ہے۔ احمدنگر کے نگراں وزیر حسن مشرف نے کہا کہ تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ لاپرواہی برتنے والوں کو چھوڑا نہیں جائے گا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button