احمد آباد دھماکے کیس اٹھانا بی جے پی کی انتخابی حکمت عملی :اکھلیش

واضح رہے کہ بی جے پی نے ہفتہ کے روز سماج وادی پارٹی کو اقلیتوں کی دوست اور خوشامد کرنے والی جماعت قرار دیا تھا اور الزام عائد کیا تھا کہ وہ 2008ء کے احمد آباد بم دھماکوں میں ملوث دہشت گردوں کے ساتھ تعلقات رکھتی ہے۔

ایٹاوا۔ پی ٹی آئی سماج وادی پارٹی صدر اکھلیش یادو نے آج بی جے پی کے اس الزام کو کہ ان کی پارٹی کے احمد آباد دہشت گرد حملہ کیس کے ایک مجرم کے والد کے ساتھ تعلقات ہیں، ریاستی اسمبلی انتخابات کی حکمت عملی کا ایک حصہ قرار دیا۔

یادو نے ضلع ایٹاوا میں اپنے آبائی موضع سیفائی میں نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے یہ دعویٰ کیا۔ بی جے پی کے اس الزام کے بارے میں دریافت کرنے پر کہ اعظم گڑھ سے تعلق رکھنے والا مجرم کا والد سماج وادی پارٹی کا لیڈر ہے، یادو نے کہا کہ کسی دہشت گرد کے خلاف سخت کارروائی کی جانی چاہیے اور اگر بی جے پی انتخابات کے دوران یہ الزام عائد کررہی ہے تو وہ ایک حکمت عملی اختیار کررہی ہے۔

واضح رہے کہ بی جے پی نے ہفتہ کے روز سماج وادی پارٹی کو اقلیتوں کی دوست اور خوشامد کرنے والی جماعت قرار دیا تھا اور الزام عائد کیا تھا کہ وہ 2008ء کے احمد آباد بم دھماکوں میں ملوث دہشت گردوں کے ساتھ تعلقات رکھتی ہے۔

نئی دہلی میں بی جے پی ہیڈ کوارٹرس میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی وزیر انوراگ ٹھاکر نے ایک تصویر جاری کی تھی، جس میں ایک شخص کو جو احمد آباد دھماکہ کیس کے ایک مجرم کا باپ بتایا جاتا ہے، اکھلیش یادو کے ساتھ کھڑا ہوا دیکھا جاسکتا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button