اسرائیلی صدر کا اولین دورہ عرب امارات

اسرائیلی وزیراعظم نفتالی بینیٹ نے گذشتہ ماہ خلیجی عرب ملک کا پہلا سرکاری دورہ کیاتھا۔ انہوں نے کئی محاذوں پر تعلقات کو مستحکم کرنے شیخ محمد سے بات چیت کی تھی۔ ہرزوگ اور بینیٹ کے دورہئ امارات کا میڈیاکوریج محدود رکھاگیا۔

دبئی: اسرائیل کے صدر اتوار کے دن متحدہ عرب امارات پہنچے۔ اسرائیل کے کسی سربراہ مملکت کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہے جو دونوں ممالک کے درمیان فروغ پاتے تعلقات کی نئی علامت ہیں جبکہ خطہ میں کشیدگی بڑھتی جارہی ہے۔ متحدہ عرب امارات اور اسرائیل نے 2020ء میں اپنے تعلقات معمول پر لائے تھے۔

ابوظبی آمد پر اسرائیلی صدر اسحاق ہرزوگ سے گرمجوشی سے مصافحہ اماراتی وزیرخارجہ شیخ عبداللہ بن زیدالنہیان نے کیا۔ بعدازاں شاہی محل میں دونوں کی بات چیت ہوئی۔ اسرائیل میں صدرکا عہدہ رسمی ہوتا ہے۔ اس ملک کے پارلیمانی نظام میں وزیراعظم کے پاس زیادہ اختیارات ہوتے ہیں۔

اسرائیلی وزیراعظم نفتالی بینیٹ نے گذشتہ ماہ خلیجی عرب ملک کا پہلا سرکاری دورہ کیاتھا۔ انہوں نے کئی محاذوں پر تعلقات کو مستحکم کرنے شیخ محمد سے بات چیت کی تھی۔ ہرزوگ اور بینیٹ کے دورہئ امارات کا میڈیاکوریج محدود رکھاگیا۔ اماراتی حکام نے قصرشاہی میں صحافیوں کو مدعو نہیں کیا جہاں یہ ملاقاتیں ہوئیں۔

 انہوں نے کوئی پریس کانفرنس بھی نہیں کی۔ سرکاری میڈیا کے جاری کردہ محتاط بیانات کے ذریعہ ہی خبر سامنے آتی ہے۔ اسرائیل پارلیمانی جمہوریت ہے لیکن اس نے بھی اپنے صحافیوں کو اس دورہ میں شامل نہیں کیا۔

ذریعہ
اے پی

تبصرہ کریں

Back to top button