اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں ایک فلسطینی شہید

شمالی مغربی کنارے کے شہر نابلس کے قریب اسرائیلی فوجیوں کے ساتھ جھڑپوں کے دوران چہارشنبہ کی صبح ایک فلسطینی نوجوان ہلاک اور 90 سے زیادہ زخمی ہو گئے۔ یہ اطلاع فلسطینی وزارت صحت نے ایک بیان میں دی۔

رملہ: شمالی مغربی کنارے کے شہر نابلس کے قریب اسرائیلی فوجیوں کے ساتھ جھڑپوں کے دوران چہارشنبہ کی صبح ایک فلسطینی نوجوان ہلاک اور 90 سے زیادہ زخمی ہو گئے۔ یہ اطلاع فلسطینی وزارت صحت نے ایک بیان میں دی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ گیتھ یامین (16) نابلس میں تنازعہ کے دوران اسرائیلی فوجیوں کے ذریعہ سر میں گولی مارنے سے ہلاک ہو گئے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ 90 سے زائد فلسطینی زخمی ہوئے، جن میں سے 11 کو گولہ بارود اور 23 کو ربڑ کی گولیاں لگیں۔

انہوں نے کہا کہ آنسو گیس کی وجہ سے 60 سے زائد افراد زخمی ہوئے۔عینی شاہدین نے بتایا کہ درجنوں فلسطینیوں اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں، جنہوں نے فلسطینیوں کو منتشر کرنے کے لیے گولہ بارود، ربڑ کی گولیاں اور آنسو گیس کی شیلنگ کی۔اسرائیلی حکام نے اس واقعے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

فلسطینی وزارت صحت کی طرف سے جاری کردہ تحریری بیان میں بتایا گیا کہ ایک سولہ سال کے شخص کے سر پر شدید چوٹ آئی تھی جس کے نتیجے میں وہ جانبر نہ ہوسکا۔عینی شاہدین کے مطابق اسرائیلی فوجیوں اور فلسطینیوں کے درمیان نابلس شہر میں جھڑپئیں ہوئی ہیں۔

اسرائیلی فوجیوں نے نابلس شہر میں غیر قانونی یہودی آباد کاروں کے علاقے میں محفوظ داخلے کو یقینی بنانے کے لیے چھاپہ مارا او جس پر فلسطینیوں نے انہیں رولنے کی کوشش کی۔فلسطین کی ہلال احمر تنظیم نے اعلان کیا کہ نابلس میں اسرائیلی فوجیوں اور فلسطینیوں کے درمیان ہونے والے واقعات میں 100 افراد زخمی ہوئے۔

تبصرہ کریں

Back to top button