افغانستان کے سابق وزیر فینانس امریکہ میں اوبر ڈرائیور

انہوں نے کہا“ ابھی میرے پاس کوئی جگہ نہیں ہے۔ میں نہ یہاں کا ہوں نہ وہاں کا۔ یہاں بہت تنہائی محسوس کررہا ہوں۔ جو بھی ہے اس سے مطمئن ہوں، میں مایوس نہیں ہونا چاہتا ”۔

واشنگٹن: افغانستان کے سابق وزیرخزانہ خالد پایندہ اپنے اہل خانہ کی پرورش کے لیے امریکہ میں اوبر کار چلا رہے ہیں۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق مسٹر پایندا نے افغانستان میں طالبان کے اقتدار میں آنے سے ایک ہفتہ قبل اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

اس وقت کے صدراشرف غنی نے ایک جلسہ عام کے دوران ان پر تنقید کی تھی۔ مسٹرغنی نے ایک لبنانی کمپنی کو نسبتاً کم رقم ادا کرنے میں وزارت کی ناکامی پر ان کی ذاتی طور پر سرزنش بھی کی تھی۔

واشنگٹن پہنچنے کے بعد سابق وزیر خزانہ کو روزی روٹی کے لیے اوبرکمپنی میں ڈرائیور کے طور پر کام کرنا پڑرہا ہے جس کا شاید انھوں نے کبھی تصوربھی نہیں کیا تھا۔

انہوں نے کہا“ ابھی میرے پاس کوئی جگہ نہیں ہے۔ میں نہ یہاں کا ہوں نہ وہاں کا۔ یہاں بہت تنہائی محسوس کررہا ہوں۔ جو بھی ہے اس سے مطمئن ہوں، میں مایوس نہیں ہونا چاہتا ”۔

سابق وزیر خزانہ نے کہا کہ افغانستان میں طالبان کی حکمرانی کے لئے امریکہ ذمہ دار ہے۔ وہ وہاں جمہوریت اور انسانی حقوق کے دفاع کے اپنے مشن سے پیچھے ہٹ گیا۔

تبصرہ کریں

Back to top button