اورنگ زیب کا مقبرہ پانچ دنوں تک بند‘ محکمہ آثار قدیمہ کا اقدام

پر محکمہ آثار قدیمہ کے اورنگ آباد سرکل کے سپرنٹنڈنٹ ملن کمار چولے نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ قبل ازیں مسجد کمیٹی نے اس مقام کو مقفل کرنے کی کوشش کی مگر ہم نے اسے کھول دیا۔ چہارشنبہ کو ہم نے مقبرے کو اگلے پانچ دنوں کے لیے بند کرنے کا فیصلہ کیا۔

اورنگ آباد: محکمہ آثار قدیمہ نے مغل شہنشاہ اورنگ زیب کا مقبرہ پانچ دنوں کے لیے بند کردیا۔ قبل ازیں علاقہ کی مسجد کمیٹی نے اس مقام کو مقفل کرنے کی کوشش کی تھی۔ ایک عہدیدار نے یہ بات کہی۔ دو دن قبل ایم این ایس کے ترجمان گجانن کالے نے اپنے ٹوئٹ میں ریاست میں اس یادگار کے وجودکی ضرورت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ اسے مسمار کردینا چاہیے۔

 بعدازاں اورنگ آباد کے خلد آباد علاقہ‘ جہاں مقبرہ واقع ہے، کی مسجد کمیٹی  نے اس یادگار کو مقفل کرنے کی کوشش کی جسے محکمہ آثار قدیمہ کا تحفظ حاصل ہے۔ بعد ازاں محکمہ آثار قدیمہ نے اس یادگار پراضافی سیکورٹی گارڈس تعینات کیے تھے۔ ربط پیدا کرنے پر محکمہ آثار قدیمہ کے اورنگ آباد سرکل کے سپرنٹنڈنٹ ملن کمار چولے نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ قبل ازیں مسجد کمیٹی نے اس مقام کو مقفل کرنے کی کوشش کی مگر ہم نے اسے کھول دیا۔ چہارشنبہ کو ہم نے مقبرے کو اگلے پانچ دنوں کے لیے بند کرنے کا فیصلہ کیا۔

ہم صورت حال کا جائزہ لے کر اسے کھولنے یا پھر مزید پانچ دنوں تک بند رکھنے کا فیصلہ کریں گے۔“ واضح رہے کہ مجلس کے لیڈر اکبر الدین اویسی نے اس ماہ کے اوائل میں مقبرہ کی زیارت کی تھی جسے حکمراں شیوسینا اور راج ٹھاکرے کی ایم این ایس نے تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

اویسی کے مقبرے کے دورے کے چند دن بعد این سی پی کے صدر شردپوار نے تعجب کا اظہار کرتے ہوئے سوال کیا کہ کیا اس حرکت کا مقصد مہاراشٹرا میں نیا تنازعہ پیدا کرنا ہے جو پُرامن طور پر کام کررہا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button