اٹارنی جنرل کے عہدہ پر مزید 3 ماہ برقرار رہنے سے وینوگوپال کا اتفاق

وینوگوپال‘ سپریم کورٹ میں جن ہائی پروفائل کیسس سے نمٹ رہے ہیں اور بار میں ان کے تجربہ کے مدنظر حکومت اس بات کی خواہاں تھی کہ وہ اس کے اعلیٰ قانونی عہدیدار کی حیثیت سے برقرار رہیں۔

نئی دہلی: سینئر ایڈوکیٹ کے کے وینوگوپال نے مرکزی حکومت کی درخواست پر مزید 3 ماہ کے لئے اٹارنی جنرل آف انڈیا کی حیثیت سے عہدہ پر برقرار رہنے سے اتفاق کرلیا ہے۔

 سرکاری ذرائع نے آج یہ بات بتائی۔ ان کی موجودہ ایک سالہ میعاد 30 جون کو ختم ہونے والی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ وینوگوپال شخصی وجوہات کی بناء پر اس دستوری عہدہ پر برقرار رہنا نہیں چاہتے تھے لیکن مرکزی حکومت کی درخواست پر انہوں نے مزید 3 ماہ کے لئے حکومت ِ ہند کے اعلیٰ قانونی عہدیدار کی حیثیت سے کام جاری رکھنے سے اتفاق کرلیا ہے۔

صدرجمہوریہ ہند نے 91 سالہ وینوگوپال کو جولائی 2017میں مکل روہتگی کے جانشین کی حیثیت سے اٹارنی جنرل آف انڈیا مقرر کیا تھا۔ بعدازاں اس عہدہ پر ان کا دوبارہ تقرر کیا گیا تھا۔ اٹارنی جنرل کی میعاد عموماً 3 سال کی ہوتی ہے۔

جب 2020میں ان کی پہلی میعاد ختم ہونے والی تھی تب انہوں نے حکومت سے درخواست کی تھی کہ وہ ان کی عمر کو مدنظر رکھتے ہوئے انہیں مزید ایک سال تک عہدہ پر برقرار رہنے دے۔

 گزشتہ سال بھی وینوگوپال کو ایک سالہ کے لئے دوبارہ مقرر کیا گیا تھا۔ وینوگوپال‘ سپریم کورٹ میں جن ہائی پروفائل کیسس سے نمٹ رہے ہیں اور بار میں ان کے تجربہ کے مدنظر حکومت اس بات کی خواہاں تھی کہ وہ اس کے اعلیٰ قانونی عہدیدار کی حیثیت سے برقرار رہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button