ایرلائن کمپنیوں کوہر سال110 جہازوں کااضافہ کرنا ضروری: وزیرشہری ہوابازی

حیدرآباد: وزیر شہری ہوابازی جیوترآدتیہ سندھیانے جمعہ کے روزکہاکہ انڈین ایرلائن آپریٹرس سے آنے والے دنوں میں ہرسال 110 سے 120 تک نئے ایرگرافٹس کے اضافہ کی امید ہے۔

شہرکے بیگم پیٹ ایرپورٹ پر شہری ہوا بازی کے شو”ونگس انڈیا 2020“ کا افتتاح کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے سندھیا نے کہاکہ آپریٹرس کوکئی عالمی مقامات کو فضائی سرویس سے مربوط کرنے کیلئے اپنے بیڑا میں بڑے ہوائی جہازوں کوشامل کرناچاہئے۔

ایرٹرافک کے اعدادوشمارمیں دوبارہ اضافہ سے متعلق پراعتمادکا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر نے کہاکہ آئندہ سال تک گھریلو فضائی مسافرین کی یومیہ تعداد4.10 لاکھ تک پہونچ جائے گی اور سال 2024-25 تک ان مسافرین کی تعدادمیں اضافہ ہوگا جس کے سبب ایرلائن صنعت ”V“ شیپ میں بحال ہوگی۔

ہندوستان‘ زبردست توسیع کی جانب دیکھ رہاہے اوریہ توسیع ایرلائنس ایریامیں ہوگی۔ایرپورٹس کے ایریا میں زبردست ترقی وتوسیع ہوگی اس کے ساتھ بیڑا میں نئے ایرکرافٹس کی شمولیت میں بھی اضافہ ضروری رہے گا۔سال 14-2013 میں ملک کے شہری ہوابازی کے بیڑا میں صرف400 ایر کرافٹس تھے۔

گزشتہ 7برسوں کے دوران ایر کرافٹس کی تعدادمیں 710 تک کااضافہ ہوا ہے۔اس طرح ان ایام کے دوران 310 جہازوں کا اضافہ ہواہے۔اگرہمیں مزید آگے جانا ہے توہرسال 110 سے 120 تک کے حساب سے ایرکرافٹس کی تعدادمیں اضافہ کرناہوگا۔

ایربس کے ایک سینئر عہدیدار نے جمعرات کے روز کہاکہ یوروپین ایرکرافٹ میکرس کا کہناہے کہ آئندہ 2دہائیوں تک ہندوستان کو2200 نئے ہوائی جہازوں کی ضرورت رہے گی۔وزیر شہری ہوا بازی کے مطابق ہندوستان میں 9ہزارپائلٹس ہیں جن میں صنف نازک کی تعداد15 فیصد ہے۔

Back to top button