ایس ایس سی امتحانات: طلبہ کو5منٹ کی تاخیر پر داخلہ کی اجازت نہیں

محکمہ تعلیمات نے واضح کردیا کہ 9:35 بجے، امتحانی مرکز پہنچنے والے امیدواروں کو اندر داخلہ کی اجازت نہیں رہے گی ایسے امیدواروں کو واپس لوٹادیا جائے گا۔

حیدرآباد: ریاست تلنگانہ میں ایس ایس سی امتحانات کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ یہ امتحانات 23مئی تا یکم جون منعقد ہوں گے۔ امیدواروں کو مقررہ وقت سے ایک گھنٹہ قبل امتحانی مراکز پہنچ جانے کی ہدایت دی گئی ہے۔

امتحانات کے آغاز سے 5منٹ کی تاخیر سے آنے والے امیدواروں کو مرکز امتحان میں داخلہ کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ امتحانات کے اوقات کار9:30 بجے صبح تا12:45بجے دن رہیں گے۔

محکمہ تعلیمات نے واضح کردیا کہ 9:35 بجے، امتحانی مرکز پہنچنے والے امیدواروں کو اندر داخلہ کی اجازت نہیں رہے گی ایسے امیدواروں کو واپس لوٹادیا جائے گا۔ ریاست بھر میں ایس ایس سی امتحان کے2861 مراکز بنائے گئے ہیں جہاں توقع ہے کہ5لاکھ9ہزار275 امیدوار امتحانات تحریرکریں گے۔

سب سے زیادہ امیدوار ضلع حیدرآباد میں ہیں جن کی تعداد75,083بتائی گئی ہے۔ کورونا کے قواعد کے تحت تمام طلبہ کو ماسک کا استعمال لازمی رہے گا۔ کورونا وبا کے پیش نظر این سی ای آر ٹی کے رہنمایانہ خطوط کے تحت محکمہ تعلیمات نے امتحانی پرچوں کی تعداد کو11سے گھٹا کر 6کردی ہے۔

ہر مضمون کے پرچہ میں چائس کے سوالات میں اضافہ کیا گیا ہے۔ امتحانی مراکز، اسکول جہاں طلبہ زیر تعلیم ہیں، کے قریب الاٹ کئے گئے ہیں۔ نقل نویسی اور دیگر بدعنوانیوں کو روکنے کیلئے ریاست بھر میں 4خصوصی فلائننگ اسکواڈس،144 اسکواڈس تشکیل دئیے گئے۔

شدید گرمی کی مناسبت سے حکومت نے ہر امتحانی مرکز پر اے این ایم اور آشاورکر کو مناسب دواؤں کے ساتھ دستیاب رہنے کا حکم دیا ہے۔ امتحانی مراکز کے اطراف امتناعی احکام(دفعہ144) نافذ رہیں گے اور قریبی زیراکس سنٹرس، امتحان کے اوقات میں بند رہیں گے۔

امتحانی مراکز کے قریب پولیس کے سخت صیانتی انتظامات کئے گئے ہیں۔ دریں اثنا ریاستی وزیر تعلیم سبیتااندرا ریڈی نے طلبہ پر زور دیا کہ وہ خوف کے بجائے خود اعتمادی کے ساتھ امتحانات میں شرکت کریں گے اور سکون کے ساتھ امتحان تحریر کریں۔

تبصرہ کریں

Back to top button