ایس پی کو دہائیوں سے سوامی پرساد موریہ کاانتظار تھا: اکھلیش یادو

فاضل نگر اسمبلی حلقہ میں منعقد ایک عوامی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے اکھلیش نے کہا’سوامی پرساد موریہ جو کامیں سال 2011 سے انتظار کررہا تھا۔ جب انہوں نے بہوجن سماج پارٹی(بی ایس پی) کو چھوڑا تھا۔

کشی نگر: سماجو ادی پارٹی(ایس پی) صدر اکھلیش یادو نے اتوار کو کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی)چھوڑ کر ایس پی میں شمولیت اختیار کرنے والے سوامی پرساد موریہ کا انتظار گذشتہ 11سالوں سے تھا۔اگر سال 2017میں سوامی پرساد میں آئے ہوتے تو یہاں کی تصویر ہی دوسری ہوتی۔

فاضل نگر اسمبلی حلقہ میں منعقد ایک عوامی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے اکھلیش نے کہا’سوامی پرساد موریہ جو کامیں سال 2011 سے انتظار کررہا تھا۔ جب انہوں نے بہوجن سماج پارٹی(بی ایس پی) کو چھوڑا تھا۔ یہ سال 2017 میں تب اگر ایس پی میں آگئے ہوتے تو ہمیں پانچ سال کے برے دن نہیں دیکھنے پڑتے۔ اترپردیش آج سب سے آگے دکھائی دیتا۔

ایس پی صدر نے کہا کہ ایس پی حکومت بننے پر آئی ٹی کے شعبے میں نوجوانوں کو 22لاکھ نوکریاں دستیاب کرانے کا کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ آئین اور جمہورت کو بچانے کا الیکشن ہے۔ ایس پی حکومت نے طے کیا ہے کہ پرانی پنشن بحال کرنے کا کام کریں گے۔ماؤں۔بہنوں کو سماج وادی پنشن کے طور پر 1500 روپئے مہینے دئیے جائیں گے۔ سالانہ 18000 روپئے ملیں گے۔

اکھلیش یادو نے کہا بی جےپی اقتدار میں مختلف مقابلہ جاتی امتحانات کے امیدواروں کے ساتھ تفریق ہوا ہے۔سماجو ادی حکومت آنے پر نوجوانوں کے ساتھ انصاف ہوگا۔انہوں نے ایس پی کو جتانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا’پسماندہ۔ دلت ایک ساتھ آکر اتنی حمایت کریں۔ یہ میں نےپہلے کبھی نہیں دیکھا ۔ہوسکتا ہے ہے کرہل کی جیت سب سے بڑی جیت ہو۔ میں چاہتا ہوں سب سے بڑی جیت اس کی ہو جس کے لئے میں ووٹ مانگنے آیا ہوں۔

اکھلیش اس دوران چیف منسٹر یوگی پر بھی خوب برسے۔ انہوں نے کہا’جب بابا وزیر اعلی کشی نگر آئے تھے تو انہوں نے دلتوں۔پچھڑوں میں شیمپو اور صابن تقسیم کیا تھا۔ اتنا ہی نہیں وزیر اعلی رہائش گاہ کو گنگا جل سے صاف کرایا تھا۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button