باپ کے کندھوں پر بیٹی کی نعش، گھر پہنچنے 10 کیلومیٹر پیدل سفر، ویڈیو وائرل

ویڈیو میں اس شخص کو اپنی بیٹی کی نعش کندھوں پر اٹھائے دیکھا جاسکتا ہے۔ اس نے گھر پہنچنے کے لیے تقریباً 10 کلومیٹر کا فاصلہ پیدل طے کیا۔

چھتیس گڑھ: چھتیس گڑھ کے سرگوجا ضلع میں ایک شخص کی اپنی 7 سالہ بیٹی کی نعش کو کندھوں پر اٹھائے ہوئے ایک ویڈیو جمعہ کو سوشل میڈیا پر بڑے پیمانے پر وائرل ہوگیا جس سے ریاستی وزیر صحت ٹی ایس سنگھ دیو کو تحقیقات کا حکم دینے پر مجبور ہونا پڑا۔

حکام کے مطابق، لڑکی کی جمعہ کی صبح ضلع کے لکھن پور گاؤں کے کمیونٹی ہیلتھ سنٹر میں موت ہو گئی تھی اور اس کے والد ایمبولینس کے پہنچنے سے پہلے ہی نعش کو لے کر روانہ ہوگئے۔

حکام نے مزید بتایا کہ امڈالا گاؤں کا رہنے والا ایشور داس اپنی بیمار بیٹی سریکھا کو صبح سویرے لکھن پور کمیونٹی ہیلتھ سنٹر لے کر آیا تھا۔ کمیونٹی ہیلتھ سنٹر کے ڈاکٹر ونود بھارگو کا کہنا ہے کہ لڑکی کا آکسیجن لیول بہت کم تھا۔ اس کے والدین کے مطابق وہ پچھلے کچھ دنوں سے تیز بخار میں مبتلا تھی۔ علاج شروع کیا گیا لیکن اس کی حالت بگڑ گئی اور صبح ساڑھے سات بجے کے قریب اس کی موت ہو گئی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ہم نے گھر والوں کو بتایا کہ ایک گاڑی جلد آئے گی۔ گاڑی صبح 9:20 کے قریب آئی، لیکن تب تک وہ نعش لے کر روانہ ہو چکے تھے۔  ویڈیو میں اس شخص کو اپنی بیٹی کی نعش کندھوں پر اٹھائے دیکھا جاسکتا ہے۔ اس نے گھر پہنچنے کے لیے تقریباً 10 کلومیٹر کا فاصلہ پیدل طے کیا۔

سوشل میڈیا پر اس ویڈیو کے بڑے پیمانے پر شیئر کیے جانے کے بعد، ریاستی وزیر صحت ٹی ایس سنگھ دیو، جو جمعہ کو ضلع کے ہیڈکوارٹر امبیکاپور میں تھے، نے ضلع کے چیف میڈیکل اینڈ ہیلتھ آفیسر سے معاملے کی جانچ کرنے اور ضروری کارروائی کرنے کی ہدایت دی۔

وزیر صحت نے کہا کہ میں نے ویڈیو دیکھا، یہ میرے لئے پریشان کن تھا۔ میں نے متعلقہ ہیلتھ عہدیدار سے کہا ہے کہ وہ معاملے کی تحقیقات کے بعد مناسب کارروائی کریں۔ میں نے ان سے یہ بھی کہا ہے کہ جو لوگ وہاں تعینات ہیں اور اپنی ذمہ داریاں نبھانے کے قابل نہیں ہیں، انہیں ہٹا دیا جائے۔

ذریعہ
منصف ویب ڈیسک

تبصرہ کریں

Back to top button