برسراقتدار آنے کے بعد بی جے پی،4 فیصد تحفظات ختم کردے گی : امیت شاہ

مرکزی وزیرداخلہ امیت شاہ نے کہاکہ تلنگانہ میں اقتدارمیں آنے کے بعد بی جے پی اقلیتوں کودیئے جارہے 4 فیصدتحفظات کوختم کردے گی اورایس سی ایس ٹی، بی سی طبقات کے تحفظات میں اضافہ کرے گی۔

حیدرآباد: مرکزی وزیرداخلہ امیت شاہ نے کہاکہ تلنگانہ میں اقتدارمیں آنے کے بعد بی جے پی اقلیتوں کودیئے جارہے 4 فیصدتحفظات کوختم کردے گی اورایس سی ایس ٹی، بی سی طبقات کے تحفظات میں اضافہ کرے گی۔

وزیرداخلہ امیت شاہ آج تکوگوڑہ میں بی جے پی کے جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے۔ صدر ریاستی بی جے پی تلنگانہ بنڈی سنجے کی پرجاسنگرام یاترا کے اختتام کے موقع پریہ جلسہ عام منعقد کیاگیا۔ مرکزی وزیرداخلہ امیت شاہ نے کہاکہ چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے ٹی آر ایس کی کارکی اسٹیرنگ مجلس کے ہاتھوں میں دے دیاہے۔

انہوں نے کہاکہ بنڈی سنجے کی پرجاسنگرام یاترا حیدرآبادکے نظام(کے سی آر) کواقتدارسے بیدخلی کیلئے منظم کی گئی ہے۔ ٹی آر ایس حکومت کوبدلنے کیلئے بی جے پی قائد بنڈی سنجے ہی کافی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ریاست سے ٹی آر ایس کواقتدارسے بے دخل کرنا بی جے پی کامقصد ہے۔

انہوں نے کہاکہ چیف منسٹرکے چندرشیکھرراؤ وسط مدتی اسمبلی انتخابات کرانے کے بارے میں سوچ رہے ہیں۔ ٹی آر ایس کی جانب سے کسی بھی وقت انتخابات کروائے جاسکتے ہیں تواس کے لئے بی جے پی تیار ہے۔ انہوں نے کہاکہ چیف منسٹرکے سی آر نے بیروزگاروں کوماہانہ بھتہ دینے، کسانوں کاایک لاکھ روپے قرض معاف کرنے کے علاوہ کئی وعدے کئے تھے تاہم اقتدارپر فائزہونے کے بعدانہوں نے ان وعدوں کوفراموش کردیاہے۔

انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت کی فلاحی اسکیمات کانام بدل کرٹی آرایس حکومت ریاست میں ان اسکیمات کونافذ کررہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ میں سرپنچ کوکوئی اختیارات نہیں دیئے گئے جبکہ جملہ اختیارات چیف منسٹرکے سی آر اوران کے فرزند کے ٹی آراوران کی لڑکی کے کویتاکو دے دیئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ میں بدعنوانیوں میں اضافہ ہوا ہے۔

چیف منسٹر کے سی آر نے تلنگانہ کومقروض ریاست میں تبدیل کردیا ہے۔ وہ مزید قرض حاصل کرناچاہتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے تلنگانہ کو 2,52,202 کروڑ روپے جاری کئے ہیں۔ انہوں نے بنڈی سنجے کوہدایت دی کہ وہ اس کی تفصیلات سے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کوواقف کروائیں۔

ریاستی حکومت کی جانب سے ایوشمان بھارت اور مرکز کی دیگراسکیمات پر عمل آوری نہیں کی جارہی ہے۔ شاہ نے کہاکہ تلنگانہ کی ترقی کیلئے ڈبل انجن کی سرکارکا قیام ضروری ہے۔ تلنگانہ میں بھی بی جے پی حکومت کی تشکیل کے بعد ریاست تیزرفتارترقی کرے گی۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ وہ بی جے پی قائد سائی گنیش کوخودکشی کے لئے مجبورکرنے والوں کے خلاف کاروائی کرے۔ جلسہ سے مرکزی وزیر کشن ریڈی،بنڈی سنجے، ای راجندر اور دیگرنے خطاب کیا۔

تبصرہ کریں

Back to top button