برقی شرحوں میں اضافہ کے خلاف کانگریس کا مہا احتجاج

برقی شرحوں میں اضافہ کے خلاف تلنگانہ کانگریس قائدین اور کارکنوں نے آج نیکلس روڈ تا دفتر ٹرانسکو ودیوت سودھا تک زبردست احتجاجی دھرنا منظم کرتے ہوئے برقی شرحوں میں اضافہ کو واپس لینے کا ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا۔

حیدرآباد۔: برقی شرحوں میں اضافہ کے خلاف تلنگانہ کانگریس قائدین اور کارکنوں نے آج نیکلس روڈ تا دفتر ٹرانسکو ودیوت سودھا تک زبردست احتجاجی دھرنا منظم کرتے ہوئے برقی شرحوں میں اضافہ کو واپس لینے کا ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا۔

صدر ٹی پی سی سی ریونت ریڈی ایم پی کی قیادت میں آج 11 بجے دن نیکلس روڈ چوراہے پر ہزاروں کانگریس کارکن جمع ہوگئے۔ ہاتھوں میں پارٹی پرچم اور پلے کارڈ تھامے ہوئے احتجاجی کارکن چیف منسٹر کے سی آر اور ان کی حکومت کی عوام مخالف پالیسیوں کے خلاف نعرے بلند کئے۔

ریونت ریڈی کے ہمراہ سینئر قائدین ٹی جیون ریڈی ایم ایل سی، سریدھر بابو ایم ایل اے، انجن کمار یادو، سی ایل پی قائد بھٹی وکرامارکہ، مدھو یاشکی گوڑ، سید عظمت اللہ حسینی، فیروز خاں، انیل کمار یادو اور دیگر قائدین موجود تھے نیکلس روڈ چوراہے سے ودیوت سودھا تک پدیاترا نکالنے کی کوشش کی تاہم پولیس کی بھاری جمعیت نے راستہ میں رکاوٹیں کھڑی کرتے ہوئے انہیں روکدیا۔

پولیس رکاوٹوں کے باوجود کانگریس قائدین اور کارکنوں کے ہجوم نے آگے بڑھنے کی کوشش کی۔ اس دوران پولیس نے طاقت کا مظاہر کرتے ہوئے انہیں روکدیا۔ پولیس اور احتجاجی کارکنوں میں زبردست مزاحمت ہوئی۔ ریونت ریڈی نے رکاوٹوں کو پھلانگ کر آگے بڑھنے کی کوشش کی تاہم پولیس نے انہیں روکدیا۔ بحث وتکرار کے بعد پولیس کانگریس قائدین کو ودیوت سودھا جانے کی اجازت دی۔ ریونت ریڈی کی قیادت میں کانگریس قائدین کا ایک وفد ودیوت سودھا پہنچا۔ جہاں ساراعلاقہ پولیس چھاونی میں تبدیل کردیا گیا۔

پولیس سے مزاحمت کے دوران مہیلا کانگریس قائد و دیا ریڈی شدید زخمی ہوگیں۔ ان کی خراب حالت کو دیکھتے ہوئے پولیس نے انہیں فوری نمس ہاسپٹل منتقل کیا جہاں ڈاکٹروں کی نگرانی میں ان کا علاج جاری ہے۔ ودیا ریڈی کی نازک حالت کو دیکھ کر احتجاجی کارکن شدید طور پر بھڑک اٹھے اور پولیس پر اپنی شدید برہمی کا اظہار کیا۔ اس دوران ریونت ریڈی کی قیادت میں کانگریس قائدین کے وفد نے ودیوت سودھا کے سامنے سڑک پر بیٹھ کر دھرنا منظم کیا اور برقی شرحوں میں اضافہ کو فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا۔

بعدازاں کانگریس قائد نے چیرمین ٹرانسکو ڈی پربھاکر راؤ سے ان کے چیمبر میں ملاقات کی اور انہیں ایک تحریری یادداشت پیش کرتے ہوئے برقی شرحوں میں اضافہ کوفوری واپس لینے کا مطالبہ کیا ریونت ریڈی نے کہا کہ برقی شرحوں میں اضافہ غریب عوام پر بھاری مالی بوجھ ہے۔ قبل ازیں چیف منسٹر کے سی آر نے وعدہ کیا تھا کہ ان کی حکومت برقی شرحوں میں اضافہ نہیں کرے گی۔

برقی شرحوں میں اضافہ کرتے ہوئے کے سی آر نے عوام کو دھوکہ دیا ہے۔ بعدازاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے۔ صدر ٹی پی سی سی ریونت ریڈی نے احتجاجیوں کو روکنے پر پولیس پر شدید برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ ہم کانگریسی کوئی بنگلہ دیش یا پاکستان سے نہیں آئے ہیں بلکہ ایک ہندوستانی کی حیثیت سے مخالف عوام پالیسی کے خلاف احتجاج کرنے آئے ہیں جو ہمارا حق ہے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس ملک سے دولت لوٹ کر بیرونی ممالک بھاگنے والوں کو نہیں روک سکی، لیکن پرامن احتجاج پر عوام کے خلاف طاقت مظاہرہ کرنا کہاں کا انصاف ہے۔ بعدازاں ریونت ریڈی نے نمس کے ڈاکٹر سے ربط پیدا کرتے ہوئے زخمی مہیلا قائد کا بہتر علاج کرنے کا مشورہ دیا۔

تبصرہ کریں

Back to top button