بریلی میں مذہبی منافرت کے خلاف توقیر رضا کی دھرم سنسد

اتحادملت کونسل کے قائدمولانا توقیر رضا نے علماء اکرام کودوبارہ دعوت دین کاسلسلہ شروع کرنے کامشورہ دیتے ہوئے کہاملک کوبھائی چارے کی ضرورت ہے۔ ہر شخص ایک دوسرے کے ساتھ پیارمحبت سے رہتا ہے توپھرملک میں امن وامان کا سلسلہ چل پڑئے گا۔

حیدرآباد: اتحادملت کونسل کے قائدمولانا توقیر رضا نے ملک کوبربادہونے سے بچانے متحدہ کوشش کرنے کی ضرورت ظاہرکی۔ بعد نمازجمعہ اترپردیش کے شہر بریلی میں اسلامیہ میدان پر منعقدہ دھرم سنسد سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاعلماء اکرام نے سلسلہ دعوت دین بندکردیاہے اس لئے ملک میں ہندوؤں اورمسلمانوں کے درمیان فرق آگیا ہے۔

انہوں نے علماء اکرام کودوبارہ دعوت دین کاسلسلہ شروع کرنے کامشورہ دیتے ہوئے کہاملک کوبھائی چارے کی ضرورت ہے۔ ہر شخص ایک دوسرے کے ساتھ پیارمحبت سے رہتا ہے توپھرملک میں امن وامان کا سلسلہ چل پڑئے گا۔

انہوں نے ہندووادیوں سے خواہش کی کہ وہ ملک کے لئے لڑیں‘اتحاد کے خاطر جدوجہد کریں۔مولانا توقیر رضاء نے کہاکہ ملک کوبربادکرنے کے لئے لڑائی نہیں لڑنی چاہئے۔انہوں نے واضح کیا کہ ان کی یہ مہم کسی سیاسی فائدے کے لئے نہیں ہے۔

اب تک ہم نے جن تکالیف میں زندگی بسر کی ہے اُس کے برخلاف ملک کی آنے والی نسلوں کے لئے اچھا‘خوشحال‘پرامن اور ترقی یافتہ ہندوستان چھوڑناہی ہمارا مقصدہے۔

ہم اس مقصد کوحاصل کرنے جہدمسلسل جاری رکھیں گے۔ہم نے عزم مصمم کرلیا ہے کہ ملک کی مستقبل کی نسلوں کے لئے اچھا ہندوستان دیں گے۔انہوں نے گذشتہ دنوں ہریدوار میں ہوئے دھرم سنسدپرتنقیدکرتے ہوئے کہاکہ وہ دھرم سنسدتھاہی نہیں۔

توقیر رضاء نے کہاکہ کسی بھی مذہب میں یہ نہیں سیکھایا گیا کہ دوسروں کاقتل عام کرو لوگوں کی برائی کرو۔ انہوں نے کہاکہ دھرم سنسدمنعقد کرنے والے ادھرمیوں کے خلاف لڑائی کی جانی چاہئے۔

اتحادملت کونسل قائد نے کہاکہ اگرحکومت ایسے لوگوں کی سرپرستی کرتی ہے توہندؤں کو چاہئے کہ ان کی تائدنہ کریں۔ایسے ادھرمیوں کے ساتھ کھڑے نہیں رہنا چاہئے۔

ذریعہ
منصف ویب ڈیسک

تبصرہ کریں

Back to top button