بی جے پی، مغل عمارتوں کے پیچھے پڑی ہے: فاروق عبداللہ، محبوبہ مفتی

جموں وکشمیر کے سابق چیف منسٹرس فاروق عبداللہ اور محبوبہ مفتی نے پیر کے دن کہا کہ ملک میں نفرت کا ماحول پیدا کیا جارہا ہے جس کے نتیجہ میں مختلف فرقوں کے مابین دراڑ پڑرہی ہے۔

سری نگر: جموں وکشمیر کے سابق چیف منسٹرس فاروق عبداللہ اور محبوبہ مفتی نے پیر کے دن کہا کہ ملک میں نفرت کا ماحول پیدا کیا جارہا ہے جس کے نتیجہ میں مختلف فرقوں کے مابین دراڑ پڑرہی ہے۔

انہوں نے اس رجحان کے خاتمہ کی کوششوں کا مطالبہ کیا۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ مختلف فرقوں کے مابین خلیج پاٹنی ہوگی۔ نفرت پھیلانے والی مہموں جیسے فلم ”دی کشمیر فائلس“ اور میڈیا پر بھونڈی ہندومسلم بحث کو روکنا ہوگا۔ اگر ہمیں ایک دوسرے کے قریب آنا ہے تو اس نفرت کا خاتمہ کرنا ہوگا۔میں نے لیفٹیننٹ گورنر کو فلم دی کشمیر فائلس کے بارے میں بتادیا ہے۔

رکن لوک سبھا و صدرنیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ‘ ضلع اننت ناگ میں میڈیا سے بات چیت کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ دی کشمیر فائلس بے بنیاد فلم ہے جس نے نہ صرف ملک میں بلکہ یہاں کشمیر میں بھی نفرت پھیلائی ہے۔ ہمارے نوجوان غصہ سے بھرے ہوئے ہیں کیونکہ اس فلم میں مسلمانوں کی غلط تصویر پیش کی گئی ہے۔

ملک بھر میں مسلمانوں سے ناانصافی ہمارے نوجوانوں میں برہمی پیدا کررہی ہے۔ ایسی فلموں کو روکنا ہوگا۔ میڈیا کو بھی روکنا ہوگا جو ملک میں نفرت پھیلارہا ہے۔ صدر پی ڈی پی محبوبہ مفتی نے کہا کہ 2010 اور 2016 میں وادی میں بے چینی زوروں پر تھی اُس وقت بھی کشمیری پنڈتوں کا تحفظ یقینی بنایا گیا۔

گیان واپی مسجد کامپلکس سروے کے بارے میں پوچھنے پر محبوبہ مفتی نے کہا کہ بی جے پی کو ان تمام مساجد کی فہرست جاری کردینی چاہئے جن پر وہ قبضہ کرنا چاہتی ہے۔ مساجد پر دعوے صرف نفرت کو ہوا دینے کے لئے کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ترقیاتی ایجنڈہ پر کب توجہ دے گی۔

محبوبہ مفتی نے کہا کہ بی جے پی اور دایاں بازو کے دیگر گروپس مغل عمارتوں کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں۔ کیا یہ لوگ تاج محل‘ قطب مینار اور لال قلعہ ڈھادیں گے؟ یہ سبھی عمارتیں مغلوں کی تعمیرکردہ ہیں۔ ہمارے ملک آنے والے 50 فیصد سیاح ان تاریخی عمارتوں کو دیکھنے جاتے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button