بی جے پی رکن کو گورنر کا پی آر او مقرر کرنے پر اسد الدین اویسی کی تنقید

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر ایک صحافی کے ٹوئٹ پرردعمل کااظہار کررہے تھے کہ ٹاملناڈو میں بی جے پی کے پی آراو، گورنر تمیلی سائی سوندرا راجن کے عوامی تعلقات عامہ عہدیدار کی ذمہ داری سنبھال رہے ہیں۔

حیدرآباد: اے آئی ایم آئی ایم کے صدر اسد الدین اویسی نے گورنر تلنگانہ ڈاکٹر تمیلی سائی سوندرا راجن کے پی آر او کے طور پر بی جے پی کے ایک کارکن کے تقرر پرسخت تنقید کی اور اس معاملہ کو نامناسب قرار دیا۔ حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ نے سوندر ا راجن کو یاد دلایا کہ گورنر برائے نام سربراہ ہے۔بی جے پی کے ایک رکن کو آپ کا پبلک ریلیشن آفیسر (پی آر او) تقرر کرنے کا معاملہ انتہائی نائستہ ہے۔ اسد الدین اویسی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے یہ بات کہی۔

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر ایک صحافی کے ٹوئٹ پرردعمل کااظہار کررہے تھے کہ ٹاملناڈو میں بی جے پی کے پی آراو، گورنر تمیلی سائی سوندرا راجن کے عوامی تعلقات عامہ عہدیدار کی ذمہ داری سنبھال رہے ہیں۔ ا ویسی نے یہ بھی ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ اس سلسلہ میں تلنگان کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے بارے میں ان کی شکایتوں پر شکوک وشبہات کا اظہار ہورہا ہے۔

گورنر نے جنہوں نے حالیہ دنوں وزیر اعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ سے ملاقات کرتے ان سے حکومت تلنگانہ کیخلاف شکاتیں کی ہیں۔جس میں گورنر آفیس کی توہین کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔ گورنر نے مختلف مواقع پر چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور وزراء کی جانب سے راج بھون کے دعوت نامے کورد کرنے پر ناخوشی کا اظہار کیا۔ ریاستی وزراء نے بھی گورنر پر سیاسی قائدکے طور پر بات کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button