تلنگانہ: شراب کی دکانات کے قیام کے خلاف مختلف مقامات پر خواتین کا احتجاج

برہم خواتین نے شراب کی دکان کو قفل ڈال دیا۔سکندرآباد بھوئی گوڑہ گاندھی اسپتال کے قریب بھی شراب کی دکان کے قیام کے خلاف احتجاج کیاگیا۔مقامی افرادنے شراب کی دکان کے قیام کے خلاف دھرنا دیا۔

حیدرآباد: رہاشئی علاقہ میں شراب کی دکان کے قیام کے خلاف عوام نے تلنگانہ کے مختلف مقامات پر احتجاج کیا۔ گذشتہ دو دنوں کے دوران تین مقامات پر عوام نے شراب کی دکانات کے قیام کے خلاف احتجاج کیا۔

مُلگ ضلع کے وینکٹاپورم سمیت دونوں جڑواں شہروں حیدرآبادوسکندرآباد کے جگت گری گٹہ اور دیگر مقامات پر عوام نے اس طرح کا احتجاج کیا۔ مُلگ ضلع کے وینکٹاپورم میں شراب کے کاروبار کے خلاف عوام کی بڑی تعداد نے احتجاج کیا۔احتجاج میں حصہ لینے والوں میں خواتین کی کثیر تعداد تھی۔

بعد ازاں برہم خواتین نے شراب کی دکان کو قفل ڈال دیا۔سکندرآباد بھوئی گوڑہ گاندھی اسپتال کے قریب بھی شراب کی دکان کے قیام کے خلاف احتجاج کیاگیا۔مقامی افرادنے شراب کی دکان کے قیام کے خلاف دھرنا دیا۔

عوام نے سوال کرتے ہوئے کہا کہ 70خاندانوں والی عمارت کے قریب کس طرح شراب کی دکان قائم کی جاسکتی ہے۔ جیہ لکشمی اپارٹمنٹ میں رہنے والوں نے اس مسئلہ پر دھرنادیاجس کے نتیجہ میں بڑے پیمانہ پر ٹریفک جام کی صورتحال پیدا ہوگئی۔

یہ بھی پڑھیں

شہرحیدرآباد کے گاجولارامامم سرکل جگت گری گٹہ کے حدود کی کیلاش ہلز میں نئی شراب کی دکان کے قیام کے خلاف مقامی افراد نے احتجاج کرتے ہوئے انتباہ دیا کہ کسی بھی حال میں اس علاقہ میں شراب کی دکان کے قیام کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

مقامی خواتین نے کہاکہ شراب کی دکان کو برخواست کرنے تک ان کا احتجاج جاری رہے گا۔انہوں نے کہاکہ وہ غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال کرنے کے لئے بھی تیار ہیں۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button