تلنگانہ میں پٹرول کی قیمت میں 90 پیسے اور ڈیزل کی قیمت میں 87 پیسے کا اضافہ

حیدرآباد: پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔ 137 دن بعد تیل کمپنیوں نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ہے جس سے تلنگانہ میں فی لیٹر پٹرول کی قیمت میں 90 پیسے اور ڈیزل کی قیمت میں 87 پیسے کا اضافہ ہوا ہے۔ حیدرآباد میں ایک لیٹر پٹرول کی قیمت 109.10 روپے جبکہ ڈیزل کی قیمت فی لیٹر 95.49 روپے ہوگئی ہے۔

 آندھرا پردیش میں ایک لیٹر پٹرول کی قیمت میں 88 پیسے اور ڈیزل کی قیمت میں 83 پیسے کا اضافہ ہوا ہے، وجئے واڑہ میں ایک لیٹر پٹرول کی قیمت 110.8 روپے اور ڈیزل کی قیمت۔ 96.83 روپے ہوگئی ہے ۔دہلی میں ایک لیٹر پٹرول کی قیمت 70 روپے ہے۔ ڈیزل کی قیمت 96.21 روپے۔ 87.47۔ ممبئی میں ایک لیٹر پٹرول کی قیمت110.82 روپے ڈیزل کی قیمت 95.00 روپے کولکتہ میں پٹرول کی قیمت فی لیٹر 105.51 روپے اور ڈیزل 90.62 روپے اور چنئی میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمت بالترتیب102.16 روپے 92.19 روپے ہوگئی ہے ۔

تیل کمپنیوں نے پٹرول اور ڈیزل کے ساتھ ساتھ پکوان گیس کی قیمتوں میں بھی اضافہ کردیا ہے۔ ایل پی جی گیس کی قیمت میں آخری مرتبہ گزشتہ سال کتوبر میں 15 روپے کا اضافہ ہوا تھا اس کے بعد سے اس کی قیمت مستحکم تھی لیکن آج سے 14 کلو کے سلنڈر کی قیمت میں 50 روپے کا اضافہ ہوا ہے۔

اس کے ساتھ ہی تلنگانہ میں پکوان گیس سلنڈر کی قیمت 1,002 روپے اور آندھرا پردیش میں 1,008 روپے ہو گئی ہے۔ تیل کمپنیوں کی جانب سے بڑھائی گئی اضافی قیمتوں کا اطلاق آج سے ہوگا۔ماہرین کا کہنا ہے کہ یوکرین کے بحران اور بین الاقوامی سطح پر خام تیل کی قیمتوں میں اضافہ کے پیش نظر تیل کمپنیوں نے ان قیمتوں میں اضافہ کیا ہے۔

Back to top button