حجاب تنازعہ کا نیا موڑ

حجاب کے حق میں درخواست داخل کرنے والی لڑکیو ں نے پیر کے دن کرناٹک ہائی کورٹ سے گزارش کی کہ انہیں اسکول یونیفارم کے رنگ کا اسلامک ہیڈ اسکارف پہننے کی اجازت دی جائے۔

بنگلورو: حجاب کے حق میں درخواست داخل کرنے والی لڑکیو ں نے پیر کے دن کرناٹک ہائی کورٹ سے گزارش کی کہ انہیں اسکول یونیفارم کے رنگ کا اسلامک ہیڈ اسکارف پہننے کی اجازت دی جائے۔

لڑکیوں نے چیف جسٹس ریتوراج اوستھی‘ جسٹس جے ایم قاضی اور جسٹس کرشنا ایم دکشت پر مشتمل بنچ سے یہ گزارش کی۔

گورنمنٹ پری یونیورسٹی کالج اُڈپی کی لڑکیوں کی طرف سے پیش ہوتے ہوئے وکیل دیودت کامت نے کہا کہ میں نہ صرف گورنمنٹ آرڈر (جی او) کو چیلنج کررہا ہوں بلکہ یونیفارم کے رنگ کا ہیڈ اسکارف پہننے کی اجازت بھی مانگ رہا ہوں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ سنٹرل اسکولس مسلم لڑکیوں کو اسکول یونیفارم کے رنگ کا ہیڈ اسکارف پہننے کی اجازت دیتے ہیں۔

یہاں بھی ایسا ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سر ڈھکنا لازمی مذہبی رواج ہے۔ اس پر پابندی دستور کی دفعہ 25 کی خلاف ورزی ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button