حکمراں اور اپوزیشن جماعتوں میں عوام کی تائید میں بات کرنے والوں کی کمی:شرمیلا

حیدرآباد: صدروائی ایس آر تلنگانہ پارٹی‘ وائی ایس شرمیلا نے کہاکہ حکمراں جماعت اور اپوزیشن جماعتوں میں عوام کے حق میں بات کرنے اور آوازاٹھانے والے قائدین کا فقدان ہے۔

آج اپنی پیدل یاترا کے 25 ویں روز روڈ شو سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ان مخصوص حالات میں انہوں نے عملی سیاست میں داخل ہونے کافیصلہ کیا۔

شرمیلا نے کہاکہ پارٹی قائم کرنے ان کا مقصد عوام کے حق میں کھڑے ہونا اورعوام کی آوازبنناہے۔وہ عوامی مسائل کاحل دریافت ہونے تک جہد مسلسل جاری رکھے گی۔

ان کی یاترابھونگیر یادادری ضلع میں جاری ہے جہاں جگہ جگہ عوام نے ان کا والہانہ استقبال کیا۔انہوں نے کہاکہ تلنگانہ میں کسانوں کی زندگیاں اجیرن بن چکی ہیں۔کسانوں کے قرض معاف نہیں کئے جارہے ہیں۔

ان پٹ سبسیڈی کا ذکر نہیں ہے۔ معیاری تخم دستیاب نہیں ہیں جس کی وجہ سے کسان خودکشی جیسے بھیانک انجام اختیار کرنے پر مجبور ہیں۔

انہوں نے کہاکہ ریاست کے عوام کی حالت قابل رحم ہے۔عوام اگر کانگریس امیدوار کاانتخاب کرتے ہیں تو وہ انحراف کرتے ہوئے ٹی آرایس میں شمولیت اختیار کرلیتاہے‘ٹی آرایس قائدین کی پارٹی میں بات ہی نہیں سنی جاتی ہے۔

اس لئے ہمارا ماننا ہے کہ حکمراں جماعت اور اپوزیشن جماعتوں میں عوام کے حق میں آوازاٹھانے والا کوئی نہیں ہے اور وائی ایس آر تلنگانہ پارٹی اس خلا کوپرکرنا چاہتی ہے۔

انہوں نے حکومت سے جاننا چاہاکہ ٹی آرایس کے 8 سالہ دورمیں کتنے کسانوں کاقرض معاف کیا گیا ہے۔ کتنی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات عمل میں لائے گئے۔

شرمیلا نے کہاکہ ہم ریاست کے عوام کودرپیش مسائل حل کرتے ہوئے نہ صرف حقیقی سنہرے تلنگانہ کا خواب پورا کریں گے بلکہ وائی ایس راج شیکھر ریڈی کے طرز حکومت راجناراجیم کااحیاء کریں گے۔

Back to top button