حکومت کی انخلاء کی کوششوں کی بھرپور حمایت

وزیر خارجہ ایس جئے شنکر نے آج کہا کہ وزارت ِ خارجہ کی پارلیمانی مشاورتی کمیٹی کے تمام ارکان نے تمام ہندوستانیوں کو یوکرین سے واپس لانے حکومت کی کوششوں کی متفقہ اور بھرپور حمایت کی ہے۔

نئی دہلی: وزیر خارجہ ایس جئے شنکر نے آج کہا کہ وزارت ِ خارجہ کی پارلیمانی مشاورتی کمیٹی کے تمام ارکان نے تمام ہندوستانیوں کو یوکرین سے واپس لانے حکومت کی کوششوں کی متفقہ اور بھرپور حمایت کی ہے۔

میٹنگ مکمل ہونے کے فوری بعد انہوں نے کہا کہ اس مسئلہ کے حکمت عملی اور انسانی پہلوؤں پر بہتر تبادلہ خیال ہوا۔ یوکرین سے تمام ہندوستانیوں کو واپس لانے کی کوششوں کی تائید کا طاقتور اور متفقہ پیام دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق جئے شنکر اور معتمد خارجہ ہرش وردھن شرنگلا نے جنگ زدہ یوکرین میں پھنسے ہوئے تمام ہندوستانیوں کو واپس لانے حکومت کی جانب سے کئے گئے اقدامات سے پارلیمانی کمیٹی کے ارکان کو واقف کرایا۔

وزیر نے ارکان کو یہ بھی بتایا کہ ابتدائی اڈوائزریز کی اجرائی سے لے کر اب تک تقریباً 17ہزار ہندوستانی شہریوں نے یوکرین چھوڑدیا ہے۔ ان میں وہ چند ہندوستانی بھی شامل ہیں جنہوں نے قبل ازیں کیف میں قائم ہندوستانی سفارت خانہ میں رجسٹریشن نہیں کرایا تھا۔

آپریشن گنگا کے تحت پروازوں کی تعداد میں اضافہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران آپریشن گنگا کے تحت 6 پروازیں ہندوستان پہنچ چکی ہیں جن کے ذریعہ تقریباً 800ہندوستانی شہری ملک واپس ہوئے ہیں جن میں بیشتر طلبا ہیں۔

ہندوستانی فضائیہ کے طیارے آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید ہندوستانیوں کو واپس لائیں گے۔ اس میٹنگ میں کانگریس قائد راہول گاندھی اور رکن پارلیمنٹ ششی تھرور نے بھی حصہ لیا۔

انہوں نے جنگ زدہ ملک سے ہندوستانیوں کا تخلیہ کرانے کے لئے حکومت کی کوششوں کی حمایت کی۔ ششی تھرور نے ٹویٹر پر بتایا کہ 6 سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے 9 ارکان پارلیمنٹ نے اس میٹنگ میں شرکت کی۔ انڈین نیشنل کانگریس سے راہول گاندھی‘ آنند شرما اور میں اس میٹنگ میں شریک تھے۔

خوشگوار ماحول میں صاف صاف بات چیت ہوئی جو اس بات کی یاددہانی کراتی ہے کہ جب قومی مفادات کا مسئلہ ہو تو ہم سب سے پہلے ہندوستانی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ میٹنگ رازدارانہ تھی۔ بہرحال ہم نے وزارت ِ خارجہ سے درخواست کی ہے کہ وہ مزید تفصیلی بیان جاری کرے۔

یہ میٹنگ تعمیری جذبہ کے ساتھ منعقد ہوئی اور تمام جماعتیں ہمارے شہریوں کی بحفاظت وطن واپسی کی خواہش رکھتی ہیں۔

شیوسینا رکن پارلیمنٹ پرینکا چترویدی نے میٹنگ میں شرکت کے بعد کہا کہ ڈاکٹر ایس جئے شنکر جی اور ہرش وردھن شرنگلاجی نے ہمیں یوکرین کی صورت ِ حال اور حکومت ِ ہند کی تخلیہ کی کوششوں سے واقف کرایا۔ ان معلومات کی فراہمی کے لئے ہم ان کے شکرگزار ہیں اور ہم سب اپنے طلبا کو وطن واپس لانے متحد ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button