حیدرآباد میں ’’ بائے بائے مودی‘‘ کے فلیکسی بورڈ

نوٹوں کی منسوخی، سرکاری اداروں کی فروخت، زرعی قوانین، اگنی پتھ اسکیم کے خلاف یہ ہورڈنگ لگائی گئی ہے۔اس میں لکھاہے کہ مودی، کالادھن واپس لانے میں بھی ناکام رہے۔ بعد ازاں پولیس کے عہدیدار وہاں پہنچے اور اس فلکسی کو وہاں سے ہٹادیا۔

حیدرآباد: شہرحیدرآباد کے بیگم پیٹ علاقہ میں لگایاگیا فلکسی پولیس کے لئے پریشان کن لمحہ کا سبب بن گیا کیونکہ اس فلکسی میں مودی کی تصویر کے ساتھ ”بائے بائے مودی“لکھاگیا ہے۔

چہارشنبہ کی صبح اچانک اس علاقہ میں اس طرح کے فلکسی کے سبب پولیس کی پریشانی میں اضافہ ہوگیا۔بعض نامعلوم افراد نے یہ فلکسی بورڈ بیگم پیٹ روڈ پر لگایاتھا۔اس فلکسی میں لکھاگیا ہے کہ مودی نے عوام کے لئے کچھ بھی نہیں کیا ہے۔

نوٹوں کی منسوخی، سرکاری اداروں کی فروخت، زرعی قوانین، اگنی پتھ اسکیم کے خلاف یہ ہورڈنگ لگائی گئی ہے۔اس میں لکھاہے کہ مودی، کالادھن واپس لانے میں بھی ناکام رہے۔ بعد ازاں پولیس کے عہدیدار وہاں پہنچے اور اس فلکسی کو وہاں سے ہٹادیا۔

پولیس نے اس احساس کا اظہار کیا ہے کہ مخالف مودی پیام سے اس علاقہ میں کشیدگی پھیل سکتی ہے۔ سمجھاجاتا کہ نامعلوم افراد ا س فلیکسی کے ذریعہ مودی زیرقیادت بی جے پی حکومت کو جواب دینا چاہتے ہیں کیونکہ حیدرآباد میں حال ہی میں بی جے پی کے دفتر کے قریب چیف منسٹر کے چندرشیکھرراو کی حکومت کی الٹی گنتی کا فلکسی بورڈ لگایاگیا تھا۔

مودی کے فلکسی کے معاملہ کو اہمیت حاصل ہوگئی ہے کیونکہ آئندہ ماہ شہرحیدرآباد میں بی جے پی کی قومی عاملہ کا اجلاس منعقد ہونے والا ہے۔اس اجلاس میں مودی کے ساتھ ساتھ بی جے پی کے سرکردہ لیڈران شرکت کرنے والے ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button