حیدرآباد میں درجہ حرارت 41.4ڈگری ریکارڈ درجہ حرارت

محکمہ موسمیات کے عہدیداروں نے عوام کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنا خیال رکھیں اور ناگزیر ہونے پر ہی گھروں سے باہر نکلیں۔محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ چند دنوں کے دوران ریاست میں گرمی کی شدت میں مزید اضافہ کاامکان ہے۔

حیدرآباد: ریاست تلنگانہ میں شدید گرمی کی لہر جاری ہے۔صبح 8بجے سے ہی گرمی کی لہر میں اضافہ درج کیاجارہا ہے۔دوپہر میں شدید گرمی اپنے عروج پر نظرآرہی ہے۔بتایاجاتا ہے کہ مئی کے مہینہ کا درجہ حرارت جاریہ سال اپریل میں ہی ریاست میں درج کیاجارہا ہے۔ شہرحیدرآباد میں گذشتہ روزمادھاپور علاقہ میں 41.4ڈگری درجہ حرارت ریکارڈ کیاگیا۔

شہر کے بالاجی نگر، مائتری ونم،ترملگری، اڈہ گٹہ میں درجہ حرارت41.3ڈگڑی سلسیس،مولاعلی میں 41.1ڈگڑی، پرشانت نگر، سری نگرکالونی، جمعرات بازار میں 41ڈگری سلسیس درج کیاگیا۔ ریاست کے بعض اضلاع میں تو درجہ حرارت 42ڈگری سلسیس درج کیاجارہا ہے۔عوام گرمی کی شدت اور دھوپ کی تپش کی وجہ سے گھروں سے باہر نکلنے سے گریز کررہے ہیں۔

شمالی تلنگانہ کے اضلاع جیسے عادل آباد،نظام آباد، راماگنڈم، بھدرادری کوتہ گوڑم،محبوب نگر میں حالیہ دنوں کے دوران دن کے درجہ حرارت میں اضافہ درج کیاجارہا ہے۔ان اضلاع میں یہ درجہ حرارت 40ڈگری سلسیس سے تجاوز کرگیا ہے۔ گرمی کی شدت کی وجہ سے لوگ دس بجے دن کے بعد سے گھروں سے نکلنے سے گریز کررہے ہیں اور کافی شدید ضرورت پر ہی گھروں سے نکل رہے ہیں۔

گذشتہ ایک ہفتہ کے دوران دن کے درجہ حرارت میں ہر دن ا اضافہ درج کیاجارہا ہے۔محکمہ موسمیات کے عہدیداروں نے عوام کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنا خیال رکھیں اور ناگزیر ہونے پر ہی گھروں سے باہر نکلیں۔محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ چند دنوں کے دوران ریاست میں گرمی کی شدت میں مزید اضافہ کاامکان ہے۔

اگرچہ کہ اپریل اور مئی کے مہینوں میں درجہ حرارت 40ڈگری سلسیس سے تجاوز کرجاتا ہے تاہم شمالی ہند سے آرہی گرم ہواوں نے صورتحال کو مزید بدتر کردیاہے اور اس کے نتیجہ میں گرمی کی شدت میں اضافہ کردیا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button