سری نگر۔ شارجہ پرواز کو پاکستان کے اوپر سے گزرنے کی اجازت نہیں

واڈیا گروپ کی بجٹ ایرلائن گوفرسٹ واحد ایرلائن ہے جو 23 اکتوبر سے سری نگر اور شارجہ کے درمیان پروازیں چلارہی ہے۔ پاکستان کے شہری ہوابازی حکام نے اس ایرلائن کو پاکستانی ایر اسپیس استعمال کرنے کی اجازت دینے سے انکار کردیا ہے۔

نئی دہلی: سری نگر سے شارجہ کا سفر کرنے والے کشمیریوں کو زائد وقت صرف کرنا پڑرہا ہے کیونکہ پاکستان نے 2 ہفتے قبل شروع کردہ اس سروس کو اپنے فضائی حدود سے گزرنے کی اجازت نہیں دی ہے۔

واڈیا گروپ کی بجٹ ایرلائن گوفرسٹ واحد ایرلائن ہے جو 23 اکتوبر سے سری نگر اور شارجہ کے درمیان پروازیں چلارہی ہے۔ پاکستان کے شہری ہوابازی حکام نے اس ایرلائن کو پاکستانی ایر اسپیس استعمال کرنے کی اجازت دینے سے انکار کردیا ہے۔ ذرائع نے یو این آئی کو یہ بات بتائی۔

گو فرسٹ (پرانا نام گو ایر) کی سری نگر۔ شارجہ فلائٹ اب براہ اُدئے پور/ احمدآباد پرواز کررہی ہے۔ وہ عمان کے اوپر سے محو پرواز ہے۔ لگ بھگ 90 منٹ زائد وقت لگ رہا ہے۔ سری نگر۔ شارجہ پرواز لگ بھگ ایک ہفتہ پاکستانی فضائی حدود سے گزرتی رہی۔ پاکستان نے اچانک پرمٹ منسوخ کردیا۔

ذرائع نے بتایا کہ 23 اکتوبر کو فلائٹ شروع ہوئی تھی۔ 30 اکتوبر تک وہ پاکستانی ایر اسپیس استعمال کرتی رہی لیکن پاکستانی شہری ہوابازی حکام نے اوورفلائنگ پرمٹ اچانک منسوخ کردیا۔ پی ٹی آئی کے بموجب حکومت ِ پاکستان نے اس کی وجہ نہیں بتائی۔

گو فرسٹ کی طرف سے بھی کوئی بیان جاری نہیں ہوا۔ اسی دوران جموں وکشمیر کے سابق چیف منسٹرس عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی نے اسے انتہائی بدبختانہ اقدام قراردیا۔ محبوبہ مفتی نے مرکز کو موردِ الزام ٹھہرایا۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.