منی لانڈرنگ کیس محبوبہ مفتی کے بھائی ای ڈی کے روبرو حاضر ہوئے

عہدیداروں نے بتایا کہ تصدق نے جو اپنی بہن کی کابینہ میں وزیر سیاحت تھے، انسداد منی لانڈرنگ ایکٹ (پی ایم ایل اے) کی دفعات کے تحت اپنا بیان قلمبند کرایا۔

نئی دہلی/سری نگر: سابق چیف منسٹر جموں وکشمیر محبوبہ مفتی کے بھائی تصدق حسین مفتی منی لانڈرنگ کیس میں پوچھ تاچھ کیلئے آج یہاں انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کے روبرو پیش ہوئے۔

عہدیداروں نے بتایا کہ تصدق نے جو اپنی بہن کی کابینہ میں وزیر سیاحت تھے، انسداد منی لانڈرنگ ایکٹ (پی ایم ایل اے) کی دفعات کے تحت اپنا بیان قلمبند کرایا۔

یہ فوجداری تحقیقات کشمیر کے بعض تاجرین کی جانب سے انہیں موصول ہونے والے فنڈس سے متعلق ہیں جو اس وقت وصول ہوئے تھے جب محبوبہ مفتی سابق ریاست جموں وکشمیر کی چیف منسٹر تھیں۔ اس کیس کے سلسلہ میں انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ نے ماضی میں محبوبہ مفتی سے پوچھ تاچھ کی ہے۔

انہوں نے چہارشنبہ کے روز پی ٹی آئی کو بتایا تھا کہ ان کے بھائی کو سمنوں کی اجرائی ان کے خلاف سیاسی انتقام ہے۔ محبوبہ مفتی نے کہا کہ جب بھی میں کسی غلط کام کے بارے میں آواز اٹھاتی ہوں میرے خاندان کے کسی نہ کسی شخص کو سمن آجاتا ہے، اس مرتبہ میرے بھائی کو سمن دیا گیا ہے۔

محبوبہ نے کہا کہ وہ سری نگر کے مضافاتی علاقہ حیدرپورہ میں پیر کے روز بے قصور شہریوں کی ہلاکت کے خلاف احتجاج کرتی رہی ہیں۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.