تاملناڈو میں شدید بارش، تاحال 17 افراد ہلاک

ریاستی دارالحکومت اور اس کے ملحقہ اضلاع میں جمعہ کو بارش تھم گئی، لیکن بحران برقرار ہے اور کئی علاقے اب بھی زیر آب ہیں۔

چینائی: تاملناڈو میں شدید بارش سے متعلق واقعات میں جمعہ کو مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 17 ہو گئی ہے۔

ریونیو اور ڈیزاسٹر منیجمنٹ کے وزیر کے کے ایس ایس آر رام چندرن نے آج یہاں نامہ نگاروں کو بتایا کہ چینائی، شیوا گنگا اور نیلگیری اضلاع میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران بارش سے متعلق واقعات میں مزید تین افراد کی موت ہوگئی۔ اس کے ساتھ ہی 64 مویشیوں کے اتلاف کی بھی اطلاع ہے۔

ریاست میں بارش کی وجہ سے اب تک 17 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ اسی دوران ریاستی دارالحکومت اور اس کے ملحقہ اضلاع میں جمعہ کو بارش تھم گئی، لیکن بحران برقرار ہے اور کئی علاقے اب بھی زیر آب ہیں۔

محکمہ موسمیات نے آج کہا کہ شمالی ساحلی تامل ناڈو میں ہوا کا دباؤ کمزور ہونے کی وجہ سے شمالی تامل ناڈو اور ملحقہ علاقوں میں اس کا اثر تبدیل ہونا شروع ہو گیا ہے۔

محکمہ نے کہا کہ ہوا کے دباؤنے کل رات چینائی کے قریب ساحل کو عبورکرلیا۔ محکمہ نے چینائی اور دیگر اضلاع میں جاری کردہ ریڈ الرٹ واپس لے لیا ہے جہاں اگلے 24 گھنٹوں میں بھاری بارش کی وارننگ جاری کی گئی تھی۔

چینائی، تروولور، کانچی پورم اور چینگل پیٹ اضلاع میں پانی جمع ہونے کے پیش نظر آج مسلسل پانچویں دن اسکولوں اور کالجوں میں تعطیل کا اعلان کیا گیا۔

کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے وزیراعلیٰ ایم کے اسٹالن نے آج چینائی کے تمام 200 وارڈوں میں خصوصی میڈیکل کیمپ شروع کرنے کا حکم دیا ہے۔ کورونا کے باوجود دیوالی کے تہوار کے دن دکانوں پر ہزاروں لوگوں کا ہجوم دیکھا گیا تھا۔

وزیراعلیٰ تاملناڈو ایم کے اسٹالن ایک خصوصی میڈیکل کیمپ کے دورہ کے موقع پر۔

اس دوران ہفتہ کو جنوبی انڈمان سمندر اور اس سے ملحقہ علاقوں میں ہوا کا تازہ دباؤ بننے کا اندیشہ ہے۔ اگلے 48 گھنٹوں میں اس کے مغرب-شمال مغرب کی طرف بڑھنے کا امکان ہے۔ چینائی میں آج پانچویں دن شدید بارش کے بعد تیز دھوپ نکلی لیکن درمیان میں بادل چھائے رہے۔

دریں اثناء کاویری ڈیلٹا خطہ کی رپورٹ کے مطابق شدید بارش سے تمام علاقوں میں کئی ایکڑ فصلیں تباہ ہوگئی ہیں اور کسانوں نے حکومت سے معاوضہ ادا کرنے کی درخواست کی ہے۔

وزیراعلیٰ ایم کے اسٹالن روزانہ کی بنیاد پر ریاست میں سیلاب کی صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں اور بارش سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کررہے ہیں۔ انہوں نے فوری طور پر فصلوں کے نقصان کا جائزہ لینے کے لیے وزیر کوآپریشن آئی پیریاسامی کی سربراہی میں چھ رکنی وزارتی ٹیم تشکیل دی ہے اور ڈیلٹا اضلاع میں فصلوں کے نقصان کی رپورٹ حکومت کو پیش کرنے کی ہدایت دی ہے۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.