نوجوانوں میں تیزرفتار ٹیکہ اندازی مہم، احساسِ ذمہ داری کی آئینہ دار: مودی

25ویں قومی یوتھ فیسٹول کا یہاں آن لائن افتتاح کرتے ہوئے مودی نے یہ بھی کہا کہ خواتین کی شادی کے لیے عمر کی حد 21 سال کرنے حکومت کا حالیہ فیصلہ ”ہماری بیٹیوں“ کی بہتری اور ان کے کیریئر کے تیقن کے لیے کیا گیا ہے۔

پڈوچیری: وزیر اعظم نریندر مودی نے ملک کے نوجوانوں کے احساسِ ذمہ داری کی ستائش کی اور کہا کہ اس کا اظہار 15 تا 18 سال عمر کے گروپ کی جانب سے کووِڈ 19 ٹیکہ اندازی کی رفتار سے ہوتا ہے، جس میں جاریہ ماہ شروع کی گئی ٹیکہ اندازی مہم میں 2 کروڑ سے زیادہ بچوں کا احاطہ کیا گیا۔

 25ویں قومی یوتھ فیسٹول کا یہاں آن لائن افتتاح کرتے ہوئے مودی نے یہ بھی کہا کہ خواتین کی شادی کے لیے عمر کی حد 21 سال کرنے حکومت کا حالیہ فیصلہ ”ہماری بیٹیوں“ کی بہتری اور ان کے کیریئر کے تیقن کے لیے کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کووِڈ ٹیکہ اندازی پروگرام میں کامیابی کے لیے نوجوانوں کا رول ایک دوسرے زاویہ سے دیکھا جارہا ہے۔

 یہ دیکھا جارہا ہے کہ نوجوان جو 15 تا 18 سال عمر کے گروپ میں ہیں، تیز رفتاری سے اپنے طور پر ٹیکہ لگوا رہے ہیں۔ اتنی قلیل مدت میں دو کروڑ سے زیادہ بچوں نے ٹیکہ لگوایا ہے۔ یہ آج کے نوجوانوں کے احساسِ ذمہ داری کی مثال ہے اور انہیں توقع ہے کہ ملک کا درخشاں مستقبل مزید مستحکم ہوگا۔ اس عمر کے گروپ کے بچوں کے لیے 3 جنوری کو ٹیکہ اندازی مہم شروع کی گئی تھی۔

 خواتین کے لیے قانونی طور پر شادی کرنے عمر میں 21 سال تک اضافہ کے بارے میں وزیر اعظم نے کہا کہ یہ یکسانیت کے اصول پر مبنی ہے۔ وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ وہ جانتے ہیں کہ بیٹوں اور بیٹیوں میں یکسانیت ہے۔ اس خیال کے تحت حکومت، لڑکیوں کی بہتری کے لیے ان کی شادی کی عمر میں 21 سال تک اضافہ کرنے کا فیصلہ کی ہے۔

 لڑکیوں کو بھی اپنا کیریئر بنانے کا موقع دیا جائے اور انہیں اپنی ترقی کے لیے زیادہ وقت دیا جائے۔ اس لحاظ سے اس سمت میں یہ ایک انتہائی اہم فیصلہ ہے۔ ہندوستان میں نوجوانوں کی آبادی پر اظہارِ خیال کرتے ہوئے مودی نے کہا کہ دنیا ہندوستان میں آبادی کے تناسب اور جمہوریت کی طاقت کو قبول کرلی ہے۔

 ہندوستان میں نوجوان جمہوری اقدار پر گامزن ہیں۔ ان میں جمہوری شعور موجود ہے اور مستقبل کے بارے میں ان کا ذہن صاف ہے۔ مودی نے سری آروبندو، سوامی وویکا نندا، بھگت سنگھ، چندر شیکھر آزاد، نیتا جی سبھاش چندر بوس اور شاعر قوم سبرا منیا بھارتی کو نوجوان کے لیے قابل تقلید ہستیاں قرار دیتے ہوئے ان کی ستائش کی اور ان کی خدمات کو یاد دلایا۔

مودی نے یہاں 122 کروڑ روپئے سرمایہ کاری سے قائم کردہ وزارتِ ایم ایس ایم ای کے ٹکنالوجی سنٹر کا افتتاح کیا۔ انہوں نے پیرو تھلوار، راجہ منی منڈپم کا بھی افتتاح کیا، جو حکومت پڈوچیری کی جانب سے 23 کرور روپئے مصارف سے تعمیر کیا گیا۔ اس موقع پر پڈوچیری چیف منسٹر این رنگا سامی نے اپنے خطاب میں کہا کہ ملک کی خدمت کے لیے ہم کئی راستے اختیار کرسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بغیر اخلاق کے تعلیم، سخاوت کے بغیر دولت، ضمیر کے بغیر تجارت اور انسانی جذبہ کے بغیر سائنس نہ صرف بے سود بلکہ خطرناک ہیں۔ تقریب میں مرکزی وزیر انوراگ سنگھ ٹھاکر اور لیفٹیننٹ گورنر ڈاکٹر ٹمل سائی سندرا راجن موجود تھے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.