جھارکھنڈ اسمبلی میں نماز کیلئے کمرہ مختص کرنے پر بی جے پی کا ہنگامہ

لاٹھی چارج کے بعد بی جے پی لیڈان ۔ کارکنان منتشر ہوگئے ۔بی جے پی کے ریاستی صدر پرکاش نے کہاکہ پارٹی کارکنان نے جدوجہد کی بدولت ہی یہ مقام حاصل کیا ہے ۔

رانچی: جھارکھنڈ اسمبلی میں نماز ادا کرنے کیلئے کمرہ مختص کئے جانے کے فیصلہ کے خلاف اہم اپوزیشن پارٹی بی جے پی کی جانب سے یہاں اسمبلی مارچ کیا گیا ۔ اسمبلی کی جانب بڑھ رہے بی جے پی کارکنان پر پولیس کے ذریعہ لاٹھی چارج کیا گیا ۔ اس واقعے میں کئی خواتین کارکنان کو بھی چوٹ لگی ہے ۔ بی جے پی کے ریاستی صدر اور راجیہ سبھار کن دیپک پرکاش کو بھی لاٹھی چارج میں ہاتھ میں چوٹ لگی ہے ۔ قانون ساز پارٹی کے لیڈر بابو لال مرانڈی نے کہاکہ نہتے کارکنان پر لاٹھی چارج کیاگیا ، وہیں خواتین کو بھی نہیں بخشا گیا ۔

پولیس کی جانب سے مظاہرہ کررہے بی جے پی کارکنان پرپانی کی بوچھار سے حملہ کیا گیا ، وہیں بیریکیڈنگ توڑ کر آگے بڑھنے کی کوشش کر رہے ریاستی صدر دیپک پرکاش ، رانچی کے رکن پارلیمنٹ سنجے سیٹھ اور دیگر دیگر لیڈران ۔ کارکنان پر پولیس کے ذریعہ طاقت کا استعمال کیا گیا ۔

پولیس لاٹھی چارج کے احتجا ج میں ریاستی صدر دپیک پرکاش اور قانون ساز پارٹی کے لیڈر بابو لال مرانڈی دھرنا پر بیٹھ گئے ۔ پولیس لاٹھی چارج اس وقت ہوا جب بی جے پی کارکنان نے اسمبلی کے باہر جگن ناتھ مندر کے پیچھے بنے دوسرے بیریکیڈنگ کو بھی توڑ دیا۔ بی جے پی لیڈران اور کارکنان کو ہٹانے کیلئے پولیس نے لاٹھی چارج کرنے کے بعد واٹر کینن سے پانی کی بوچھار بھی کی۔

لاٹھی چارج کے بعد بی جے پی لیڈان ۔ کارکنان منتشر ہوگئے ۔بی جے پی کے ریاستی صدر پرکاش نے کہاکہ پارٹی کارکنان نے جدوجہد کی بدولت ہی یہ مقام حاصل کیا ہے ۔ قبل میں بھی ایمرجنسی اور لالوپرساد کی بد انتظامی کے خلاف طویل جدوجہد کی ہے ۔

بابو لال مرانڈی نے کہاکہ جھارکھنڈ حکومت کا یہ رویہ بلکل غیر ذمہ دارانہ ہے اور پولیس کے رویے پر بھی سوال اٹھایا۔ بے روزگاری کے معاملے پر بابو لال نے کہاکہ حکومت جان بوجھ کر اس پر بحث نہیں کرنا چاہتی ہے ۔ ساتھ ہی بابو لال نے کہاکہ نماز کیلئے مختص کئے گئے کمرے کا حکم جب تک واپس نہیں ہوتا ہے ، تب تک تحریک جاری رہے گی ، ساتھ ہی کہا کہ یہ تحریک ملک بھر میں ہوگی ۔

(یواین آئی)

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.