افغان صورتحال پر جئے شنکر کی سعودی وزیر سے بات چیت

کابل کی صورتحال پر سعودی عرب کا موقف اہمیت کا حامل ہے کیونکہ خلیج کے کئی ممالک بشمول قطر اور ایران‘ افغان امن مساعی میں رول ادا کر رہے ہیں۔

نئی دہلی: وزیر خارجہ ایس جئے شنکر نے اتوار کے دن نئی دہلی میں اپنے سعودی ہم منصب فیصل بن فرحان السعود سے وسیع تر بات چیت کی۔ انہوں نے افغان صورتحال کے بشمول باہمی اور علاقائی امور پر تبادلہ خیال کیا۔ فیصل بن فرحان السعود ہفتہ کی شام 3روزہ دورہ پر نئی دہلی پہونچے۔

بڑا علاقائی ملک ہونے کی وجہ سے کابل کی صورتحال پر سعودی عرب کا موقف اہمیت کا حامل ہے کیونکہ خلیج کے کئی ممالک بشمول قطر اور ایران‘ افغان امن مساعی میں رول ادا کر رہے ہیں۔ جئے شنکر نے ہندوستان سے خلیجی ملک کیلئے سفری تحدیدات میں مزید نرمی کا مطالبہ کیا۔

 انہوں نے کووڈ۔19وباء کے دوران ہندوستانی برادری کی مدد کیلئے سعودی عرب کی ستائش کی۔ کورونا وباء پھوٹ پڑنے کے بعد سعودی عرب کا کوئی وزیر پہلی مرتبہ ہندستان کے دورہ پر آیا ہے۔ وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ دونوں وزراء نے افغانستان کے حالات اور دیگر علاقائی مسائل پر بات چیت کی۔

 انہوں نے اسٹراٹیجک پارٹنرشپ کونسل معاہدہ کا بھی جائزہ لیا۔ یہ معاہدہ اکتوبر 2019میں ہوا تھا۔ وزارت خارجہ کے بموجب دونوں ممالک نے باہمی تعاون کو بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا۔ پتہ چلا ہے کہ دونوں وزراء نے زیادہ تر بات چیت افغانستان کی صورتحال پر کی۔ ہندوستان اور سعودی عرب کے درمیان دفاعی تعاون دھیرے دھیرے بڑھ رہا ہے۔ ہندوستانی فوجی سربراہ ایم ایم نروا نے گذشتہ برس دسمبر میں سعودی عرب گئے تھے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.