اکثریت۔ اقلیت کی اصطلاح غیرضروری: عارف محمد خان

دہلی میں ایک کانکلیو میں انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہندوستانی تہذیب اور ”ہمارے ثقافتی ورثہ“ میں مذہب کی بنیاد پر بھید بھاؤ کا کوئی تصورنہیں ہے۔

نئی دہلی: گورنر کیرالا عارف محمد خان نے ہفتہ کے دن کہا کہ وہ اکثریت۔ اقلیت کی اصطلاح کو ہندوستانی تناظر میں درست نہیں مانتے کیونکہ یہاں سارے شہریوں کو پاکستان کے برخلاف ”مساوی حقوق“ حاصل ہیں۔ پاکستان میں ان لوگوں پر بندش ہے جو مسلمان نہیں ہیں۔

دہلی میں ایک کانکلیو میں انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہندوستانی تہذیب اور ”ہمارے ثقافتی ورثہ“ میں مذہب کی بنیاد پر بھید بھاؤ کا کوئی تصورنہیں ہے۔

عارف محمد خان نے کہا کہ عرصہ سے وہ یہ بات کہہ رہے ہیں اور لوگوں سے ان کا سوال ہے کہ کوئی ایسی دفعہ بتائیں جو مذہبی تناظر میں اقلیتی حقوق کی بات کرتی ہو۔

انہوں نے کہا کہ اکثریت۔ اقلیت کی اصطلاح سے آپ کیا مراد لیتے ہیں‘ کیا میں دوسروں کے برابر نہیں ہوں‘ میں ایسا ہندوستانی شہری ہوں جسے مساوی حقوق حاصل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی تہذیب کی تشریح مذہب کی بنیاد پر کبھی بھی نہیں ہوئی۔ دیگر تمام تہذیبوں کی تشریح یا تو مذہب کی بنیاد پر یا نسل اور زبان کی بنیاد پر ہوئی ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.