بنگلہ دیش کی جنگ آزادی 20ویں صدی کا غیر معمولی واقعہ:راج ناتھ

انہوں نے ہندوستان کی مسلح افواج اور حکومت کی جانب سے بنگلہ دیش کی مسلح افواج کو مبارکباد اور امن اور سلامتی کی طرف ان کی کوششوں میں کامیابی کی خواہش کی۔

نئی دہلی: وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے بنگلہ دیش کی جنگ آزادی کو بیسویں صدی کا ایک غیر معمولی واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ ناانصافی، ظلم اور جبر کے خلاف اخلاقی بنیادوں پر لڑی جانے والی لڑائی تھی۔

سنگھ نے بنگلہ دیش کے آرمی ڈے کے موقع پر یہاں واقع بنگلہ دیش ہائی کمیشن میں منعقدہ ایک پروگرام میں یہ بات کہی۔

انہوں نے ہندوستان کی مسلح افواج اور حکومت کی جانب سے بنگلہ دیش کی مسلح افواج کو مبارکباد اور امن اور سلامتی کی طرف ان کی کوششوں میں کامیابی کی خواہش کی۔

وزیر دفاع نے کہا کہ بنگلہ دیش کی آزادی کی جنگ کی گولڈن جوبلی کے پیش نظر یہ سال ہندوستان-بنگلہ دیش تعلقات کے لیے غیر معمولی اہمیت کا حامل ہے۔سنگھ نے بنگا بندھو شیخ مجیب الرحمن کو یاد کرتے ہوئے انہیں خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ ان کی جدوجہد اور متاثر کن قیادت نے بنگلہ دیش کے لوگوں کو آزادی کے لئے رہنمائی ملی۔

انہوں نے بنگلہ دیش کی آزادی کی جنگ کے دوران شہید ہونے والے ہندوستانی مسلح افواج کے بہادر سپاہیوں کو بھی خراج عقیدت پیش کیا۔ انہوں نے اس وقت کی ہندوستانی قیادت کی بھی تعریف کی جس نے نامساعد حالات اور محدود وسائل کے زور پر ناانصافی اور ظلم کے خلاف مضبوطی سے لڑائی لڑئی۔

انہوں نے کہا کہ یہ لڑائی غیر جمہوری حکمرانی اور جبر کے خلاف لڑی گئی۔ ہندوستان نے اسے موقع پر لاکھوں پناہ گزینوں کو پناہ دی جب اس کے پاس اپنے ہی ہم وطنوں کے لیے بھی اتنے وسائل نہیں تھے۔ اس وقت جدوجہد کررہے ایک ملک نے دوسرے ضرورت مند ملک کی مدد کی۔وزیر دفاع نے ہندوستان اور بنگلہ دیش کے درمیان دفاعی شعبے میں تعاون پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے بنگلہ دیش کو دفاعی ساز و سامان کے لیے 50 کروڑ امریکی ڈالر کا قرض دیا ہے۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.