لکھیم پور میں کسانوں کو کچلنا غیر انسانی حرکت: راہول گاندھی

وزیر اعظم نریندر مودی کا نام لیے بغیر ان پر حملہ کرتے ہوئے انہوں نے ٹویٹ کیا کہ جو اس غیر انسانی قتل عام کو دیکھ کر بھی خاموش ہے وہ پہلے ہی مر چکا ہے۔ لیکن ہم اس قربانی کو رائیگاں نہیں جانے دیں گے - کسان ستیہ گرہ زندہ باد۔

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہول گاندھی نے اتر پردیش کے لکھیم پور کھیری میں کسانوں کو کچلنے کے واقعہ کو غیر انسانی قرار دیا اور کہا کہ اس قربانی کو رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا۔راہول گاندھی نے ٹویٹ کرکے ایک خبر پوسٹ کی ہے کہ بی جے پی لیڈر کی گاڑی نے کسانوں کو کچل دیا ، اتر پردیش کے لکھیم پور کھیری میں کسانوں نے کار میں آگ لگائی۔

وزیر اعظم نریندر مودی کا نام لیے بغیر ان پر حملہ کرتے ہوئے انہوں نے ٹویٹ کیا کہ جو اس غیر انسانی قتل عام کو دیکھ کر بھی خاموش ہے وہ پہلے ہی مر چکا ہے۔ لیکن ہم اس قربانی کو رائیگاں نہیں جانے دیں گے – کسان ستیہ گرہ زندہ باد۔

خبروں میں کہا جا رہا ہے کہ لکھیم پور کھیری میں مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا کے بیٹے نے کسانوں پر اس وقت گاڑی چڑھا دی جب کسانوں نے مرکزی وزیر مملکت برائے زراعت اجے مشرا اور ریاست کے نائب چیف منسٹر کیشوا پرساد موریہ کے آنے کی اطلاع پر کسانوں نے ہیلی پیڈ پر قبضہ کرلیا۔ کسان زراعت سے متعلق قوانین کو واپس لینے کا مطالبہ کر رہے تھے۔

باوثوق ذرائع سے موصول اطلاع کے مطابق اتوار کی بنویر پور میں نائب چیف منسٹر کیسو پرساش موریہ کو ایک پروگرام میں آنا تھا جبکہ کسان اپنے مطالبات کی حمایت میں کالے جھنڈے دکھانے کے لئے کھڑے تھے۔ بی جے پی کارکنوں نے سراپا احتجاج کسانوں کو ہٹانے کی کوشش کی جسے لےکر دونوں فریقین میں تنازع شروع ہوگیا۔ اس درمیان بی جے پی کارکنوں نے کسانوں کی بھیڑ کو کار سے روندنے کی کوشش کی ۔ اس حادثہ میں تین کسان شدید طور سے زخمی ہوگئے۔

انہوں نے بتایا کہ حادثہ میں زخمی دو کسانوں کے جاں بحق ہونے کی اطلاع ہے لیکن اس کی آفیشیل تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔ ادھر کسانوں نے دو گاڑیوں کو نذر آتش کردیا ہے۔ الزام ہے کہ کسانوں کوروندنے کی کوشش کرنے والوں میں مقامی رکن پارلیمان اور مملکتی وزیر برائے داخلہ اجئے مشر ٹینی کا بیٹا آشیش عرف مونو بھی شامل ہے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.