ملک کی ترقی کیلئے بلاروک ٹوک بحری سرگرمیاں ضروری : راجناتھ سنگھ

راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ انڈین کوسٹ گارڈ علاقائی تعاون کو فروغ دینے، بحر ہند میں سمندری امن کو برقرار رکھنے اور حکومت کے ویژن کے مطابق بین الاقوامی سمندری ایجنسیوں کے ساتھ مل کر کام کرنے میں ہمیشہ پیش پیش رہا ہے۔

نئی دہلی:  ہندوستان کی خوشحالی بڑی حد تک اس کے سمندروں سے مربوط ہے اور ملک کی ترقی کے لیے بلاروک ٹوک بحری سرگرمیاں انتہائی اہمیت کی حامل ہیں۔ وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے آج یہاں یہ بات کہی۔ انہوں نے یہاں انڈین کوسٹ گارڈ ڈیکوریشن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ملک کے سمندر کے ساتھ قدیم تعلقات کا حوالہ دیا اور کہاکہ ہماری روایات، تہوار، فنون، ادب، ثقافت، تجارت اور معیشت، بڑی حد تک سمندر سے مربوط ہیں، لیکن اس خوشحالی کے ساتھ ساتھ ہمیں سمندر سے کافی سیکورٹی چیلنجس بھی درپیش ہیں۔ ہمارا سمندر کے ساتھ دیرینہ تعلق ہے۔

ایک طرف سمندر نے ہمیں دولت، معدنیات اور نباتات سے مالا مال کیا ہے تو دوسری طرف اس نے ہمیں دنیا سے جوڑنے کا کام بھی کیا ہے۔ بحری سرگرمیوں کو ملک کی ترقی کے لیے ضروری قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج ہمارا ملک تیزی سے ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔ اس طرح ہماری بنیادی ضروریات میں سے ایک بلاروک ٹوک بحری سرگرمیاں ہیں۔ بڑھتی ہوئی سمندری طاقت کے طور پر ہمارا بہت حد تک سمندر پر انحصار ہے۔

 سمندری سلامتی کو ملکی سلامتی کا اہم حصہ قرار دیتے ہوئے وزیر دفاع نے کہا کہ اس کے بغیر ملک کی سلامتی ممکن نہیں۔ سمندری سیکورٹی کے بغیر ایک جامع اندورنی اور بیرونی سیکورٹی فریم ورک کی تعمیر ممکن نہیں۔ ملک کے سمندری زون کو محفوظ اور آلودگی سے پاک رکھنا ہماری سیکورٹی ضروریات اور بیک وقت معاشی ترقی کو یقینی بناتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ انڈین کوسٹ گارڈ علاقائی تعاون کو فروغ دینے، بحر ہند میں سمندری امن کو برقرار رکھنے اور حکومت کے ویژن کے مطابق بین الاقوامی سمندری ایجنسیوں کے ساتھ مل کر کام کرنے میں ہمیشہ پیش پیش رہا ہے۔

 انہوں نے بتایا مجھے یہ کہتے ہوئے مسرت ہورہی ہے کہ ہمارے کوسٹ گارڈ کی جانب سے میری ٹائم سیکورٹی کو یقینی بنانے کے لیے کیے گئے دلیرانہ اقدامات کا اثر ہمارے پڑوس پر بھی ہوا ہے۔   راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ انڈین کوسٹ گارڈ علاقائی تعاون کو فروغ دینے، بحر ہند میں سمندری امن کو برقرار رکھنے اور حکومت کے ویژن کے مطابق بین الاقوامی سمندری ایجنسیوں کے ساتھ مل کر کام کرنے میں ہمیشہ پیش پیش رہا ہے۔

 انہوں نے بتایاکہ”مجھے یہ کہتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ سمندری سلامتی کو یقینی بنانے کے لیے ہمارے کوسٹ گارڈ کی جانب سے کیے گئے دلیرانہ اقدامات نے نہ صرف ہمارے خطے بلکہ ہمارے پڑوس پر بھی اثرات مرتب کیے ہیں۔ "اس تناظر میں انہوں نے کوسٹ گارڈ کے مختلف کامیاب مشنوں جیسے ‘نیو ڈائمنڈ’ پھر کنٹینر ویسل ایکسپریس پرل کا ذکر کیا، انہوں نے بتایا کہ کوسٹ گارڈ کی بروقت کارروائی کی وجہ سے بڑی تباہی کو ٹالا جاسکا۔

 اس سے ملک کو عالمی شہرت اور ایک ذمہ دار اور مضبوط کوسٹ گارڈ کے طور پر آپ کی پہچان بنی ہے۔ انہوں نے غیر قانونی اسلحہ اور منشیات کی اسمگلنگ کے شعبے میں کوسٹ گارڈ کی نمایاں شراکت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس سے معاشرے اور قوم کی خدمت ہوئی ہے اور ملک کا مستقبل بھی محفوظ اور مضبوط ہوا ہے۔

 انہوں نے سمندری طوفانوں کے دوران بھی کوسٹ گارڈ کی کارروائیوں کی تعریف کی۔ سنگھ نے کہا کہ کوسٹ گارڈ، جو کبھی چار سے چھ کشتیوں سے شروع ہوا تھا، آج 150 سے زائد جہازوں اور 66 طیاروں کے ساتھ دنیا کی بہترین سمندری افواج میں ایک اہم مقام رکھتا ہے اور اہل وطن کو یقین ہے کہ قومی سمندری مفاد ملک محفوظ ہاتھوں میں ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.