مودی، ملک کو گمراہ کررہے ہیں : کانگریس

کانگریس ترجمان گورؤ ولبھ نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ وزیراعظم نے جو اعدادوشمار پیش کئے وہ کچے پکے ہیں کیونکہ آدھا سچ انتہائی خطرناک ہوتا ہے۔

نئی دہلی: کانگریس نے جمعہ کے دن وزیراعظم نریندر مودی پر الزام عائد کیا کہ وہ کورونا ٹیکوں کے تعلق سے ملک کو گمراہ کررہے ہیں کیونکہ ملک کی صرف 21 فیصد آبادی کو ہی دو ٹیکے لگے ہیں۔

اپوزیشن جماعت نے وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ وہ وائٹ پیپر جاری کریں کہ ان کی حکومت جاریہ سال کے اختتام تک تمام بالغ افراد کو ٹیکے کیسے لگائے گی جس کا کہ اس نے سابق میں وعدہ کیا تھا۔

کانگریس ترجمان گورؤ ولبھ نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ وزیراعظم نے جمعہ کے دن اپنے خطاب میں مہنگائی اور دہشت گردی جیسے مسائل کے تعلق سے کچھ بھی نہیں کہا جو ملک کو درپیش ہیں کورونا وائرس کی وجہ سے مرنے والے 4 لاکھ 53 ہزار افراد کے ورثاسے اظہارِ تعزیت کے بجائے وزیراعظم جشن منارہے ہیں۔

انہوں نے اخباری نمائندوں سے کہا کہ وزیراعظم کو ملک کو درپیش مسائل پر بات چیت کرنی چاہئے اس کے بجائے وہ مہااتسو منارہے ہیں۔ وزیراعظم نے غلط طریقہ سے مسئلہ پر روشنی ڈالی ہے۔ انہوں نے غلط اعدادوشمار پیش کرتے ہوئے ملک کو گمراہ کرنے کی کوشش کی ہے۔

متعلقہ

گورؤ ولبھ نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ وزیراعظم نے جو اعدادوشمار پیش کئے وہ کچے پکے ہیں کیونکہ آدھا سچ انتہائی خطرناک ہوتا ہے۔

کانگریس قائد نے کہا کہ دنیا میں صرف 2 ممالک ایسے ہیں جہاں 50 فیصد سے زائد آبادی کو دونوں ٹیکے لگ چکے ہیں۔ ہندوستان 100 کروڑ ٹیکے دینے والا پہلا ملک ہونے کا دعویٰ جھوٹا ہے کیونکہ چین نے ستمبر میں 216کروڑ ٹیکے لگادیئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ چین نے اپنی 80 فیصد آبادی کو دونوں ٹیکے دے دیئے ہیں جبکہ ہندوستان نے صرف 20 فیصد آبادی کو ویکسین کی دو خوراکیں دی ہیں۔ ہم وزیراعظم سے جاننا چاہیں گے کہ بہتر ہوتا کہ وہ یہ بتاتے کہ اسکول اور کالج جانے والے ہمارے طلبا کو ویکسین کب سے دی جائے گی۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.