مودی حکومت بزدل‘ کسی کے ساتھ انصاف نہیں کر سکتی:راہول گاندھی

راہول گاندھی نے کہا کہ حکومت نے زراعت ایکٹ کو منسوخ کرنے کی تجویز پر بحث سے بچنے کے لئے پارلیمنٹ کو کام کرنے کی اجازت نہ دینے پر ایوان بالاراجیہ سبھا میں اپوزیشن کے 12 ممبران پارلیمنٹ کو معطل کر دیا۔

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہول گاندھی نے ایوان بالا راجیہ سبھا کے 12 ارکان کی معطلی کے خلاف جمعرات کو پارلیمنٹ کے کیمپس میں مسلسل تیسرے دن بھی دھرنا دیا اور کہا کہ مودی حکومت بزدل ہے۔ اس لیے وہ کسی کے ساتھ انصاف نہیں کر سکتی۔کانگریس لیڈر نے کہا کہ حکومت پارلیمنٹ میں اپوزیشن کے سوالوں سے ڈرتی ہے، اس لیے وہ کسی بھی معاملے پر بحث کرنے سے بھاگتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے زراعت ایکٹ کو منسوخ کرنے کی تجویز پر بحث سے بچنے کے لئے پارلیمنٹ کو کام کرنے کی اجازت نہ دینے پر ایوان بالاراجیہ سبھا میں اپوزیشن کے 12 ممبران پارلیمنٹ کو معطل کر دیا۔

حکومت پر پارلیمنٹ میں بحث سے گریز کرنے کا الزام لگاتے ہوئے راہول گاندھی نے ٹوئٹ کیا“سوالوں سے خوف، سچائی سے ڈر، حوصلہ سے ڈر… جو حکومت ڈرے، وہ صرف ناانصافی ہی کرتی ہے ”۔پارلیمنٹ کے کیمپس میں بابائے قوم کے مجسمہ کے سامنے دھرنا کی قیادت کررہے راہل گاندھی کے ساتھ لوک سبھا میں کانگریس قائدین ادھیر رنجن چودھری، کے سی وینوگوپال، کے سریش سمیت کئی پارٹیوں کے ارکان پارلیمنٹ بھی موجود تھے۔ یہ تمام اراکین پارلیمنٹ ہاتھوں میں پلے کارڈز لے کر حکومت مخالف نعرے لگا رہے تھے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.