مہنت نریندر گری کی موت کی سی بی آئی تحقیقات شروع

سی بی آئی کی 5 رکنی ٹیم تحقیقات کا عمل شروع کرنے جمعرات کے دن پریاگ راج پہنچی۔ حکومت اترپردیش نے سی بی آئی تحقیقات کی سفارش کی تھی جس کے بعد ایف آئی آر درج ہوئی۔

پریاگ راج/ نئی دہلی: سنٹرل بیورو آف انوسٹیگیشن (سی بی آئی) نے اکھل بھارتیہ اکھاڑہ پریشد کے سربراہ مہنت نریندر گری کی پراسرار حالات میں موت کے سلسلہ میں ایف آئی آر درج کرلی ہے۔ سرکاری ذرائع نے دہلی میں جمعہ کے دن یہ بات بتائی۔

سی بی آئی کی 5 رکنی ٹیم تحقیقات کا عمل شروع کرنے جمعرات کے دن پریاگ راج پہنچی۔ حکومت اترپردیش نے سی بی آئی تحقیقات کی سفارش کی تھی جس کے بعد ایف آئی آر درج ہوئی۔

72 سالہ مہنت پیر کے دن باغ عنبر مٹھ میں اپنے کمرہ میں مردہ پایا گیا تھا۔ ابتدائی پوسٹ مارٹم سے پتہ چلا کہ موت‘دم گھٹنے (پھانسی لینے) کی وجہ سے ہوئی۔ اترپردیش پولیس کی تحقیقات کے بموجب مہنت دوپہر کے کھانے کے بعد آخری مرتبہ اپنے کمرہ میں جاتا دیکھا گیا۔

شام میں چیلوں نے جب دروازہ پر دستک دی تو کوئی جواب نہیں ملا۔ چیلے جب دروازہ توڑکر اندر داخل ہوئے تو انہوں نے دیکھا کہ مہنت‘ چھت سے لٹکا ہوا ہے۔ ہاتھ سے لکھا ایک مبینہ خودکشی نوٹ مہنت کے کمرہ سے ملا۔

مہنت نے اس میں اپنی وصیت لکھی اور ان لوگوں کے نام لکھے جو اسے پریشان کررہے تھے۔ مہنت کی موت پر بڑا تنازعہ پیدا ہوگیا تھا۔ کئی سادھو سنتوں نے خودکشی نوٹ کو فرضی قراردیا اور ”قتل“کی تحقیقات کا مطالبہ کیا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.