ڈرون طیاروں کے لئے قواعد میں نرمی: وزارت ِ شہری ہوابازی

وزیراعظم نریندر مودی نے ٹویٹر پر کہا کہ نیا ڈرون رول اس شعبہ کے لئے ہندوستان میں ایک تاریخی لمحہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ قواعد بھروسہ اور سیلف سرٹیفکیشن پر مبنی ہے۔

نئی دہلی: وزارت ِ شہری ہوابازی نے فارمس کی تعداد گھٹاتے ہوئے ملک میں ڈرون پروازیں چلانے کے قواعد میں نرمی لائی ہے۔ ڈرون پروازیں چلانے کے لئے قبل ازیں 25 قسم کے فارم پر کرنا پڑتا تھا۔ اب ان کی تعداد گھٹاکر 5 کردی گئی ہے اور آپریٹر کو صرف معمولی فیس ادا کرنی پڑے گی۔

وزیراعظم نریندر مودی نے ٹویٹر پر کہا کہ نیا ڈرون رول اس شعبہ کے لئے ہندوستان میں ایک تاریخی لمحہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ قواعد بھروسہ اور سیلف سرٹیفکیشن پر مبنی ہے۔

منظوریوں‘ قوانین کی تعمیل اور داخلہ کی رکاوٹوں کو قابل لحاظ حد تک گھٹادیا گیا ہے۔

ڈرون رولس 2021 چہارشنبہ کے روز جاری کئے گئے جو اَن میانڈ ایرکرافٹ سسٹم (یو اے ایس) قواعد 2021 کو منسوخ کرتے ہیں۔ یہ قواعد 12 مارچ کو نافذالعمل ہوئے تھے۔ نئے قواعد کے تحت فیس کو محض علامتی بنادیا گیا ہے اور ڈرون کے سائز سے غیرمربوط کردیا گی ہے۔

مثال کے طورپر ریموٹ پائلٹ لائسنس کی فیس کو (بڑے ڈرون کے لئے) 3ہزار روپے سے گھٹاکر ہر زمرہ کے ڈرون کے لئے 100 روپے کردیا گیا ہے اور یہ 10 سال تک کارآمد رہے گی۔

نئے قواعد کے تحت مختلف منظوریوں کی ضروریات بشمول سرٹیفکیٹ آف کنفارمینس‘ سرٹیفکیٹ آف مینٹیننس‘ امپورٹ کلیرنس‘ آپریٹر پرمٹ اور اسٹوڈنٹ ریموٹ پائلٹ لائسنس کی ضرورت کو ختم کردیا گیا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.