کامیابی کے لئے ڈسپلن اور اتحاد ضروری:سونیا گاندھی

کانگریس صدر نے اپنے افتتاحی ریمارکس میں کہا کہ میں پھر زور دینا چاہوں گی کہ ڈسپلن اور اتحاد کی اولین ضروری ہے۔ ہم میں ہر کسی کو چاہئے کہ وہ تنظیم کو متحد کرے۔

نئی دہلی: کانگریس قائدین کو صاف صاف پیام میں پارٹی صدر سونیا گاندھی نے منگل کے دن کہا کہ تنظیم کو مستحکم کرنا ”شخصی عزائم“ پر مقدم ہونا چاہئے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ اجتماعی اور انفرادی کامیابی کے لئے ڈسپلن اور اتحاد ضروری ہے۔ 5 ریاستوں میں آئندہ سال منعقد شدنی اسمبلی الیکشن کے لئے حکمت عملی وضع کرنے پارٹی قائدین کے اجلاس کی صدرات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریاستی قائدین میں تک پالیسی امور پر وضوح (Clarity) نہیں ہے۔ انہوں نے تشویش ظاہر کی کہ کلیدی مسائل پر پیامات نچلی سطح کے کیڈر تک نہیں جارہے ہیں۔

 سابق صدر راہول گاندھی‘ پارٹی جنرل سکریٹریز اور پردیش کانگریس کے صدور نے میٹنگ میں شرکت کی۔ یہ اجلاس ایسے وقت ہوا ہے جب کانگریس کے ریاستی یونٹس میں دھڑے بندی بڑھتی جارہی ہے۔ سونیا گاندھی نے کہا کہ پارٹی‘ بی جے پی کے جھوٹے پروپگنڈہ کا توڑ کرنے اپنے کیڈر کی تربیت پر بھی توجہ دینا چاہتی ہے۔

 میٹنگ میں اترپردیش‘ پنجاب‘ گوا‘ اتراکھنڈ اور منی پور اسمبلی الیکشن سے قبل حکمت عملی وضع کی گئی۔ کانگریس صدر نے اپنے افتتاحی ریمارکس میں کہا کہ میں پھر زور دینا چاہوں گی کہ ڈسپلن اور اتحاد کی اولین ضروری ہے۔ہم میں ہر کسی کو چاہئے کہ وہ تنظیم کو متحد کرے۔ اس کے لئے شخصی عزائم سے اوپر اٹھنا ہوگا۔

پارٹی ورکرس کے لئے ٹریننگ پروگرامس پر زور دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انہیں ترجیح دی جانی چاہئے۔ انہوں نے نئے ارکان کو کسی بھی سیاسی تحریک کے لئے رگوں میں دوڑنے والا خون قراردیا۔ ملک کے نوجوانوں اور خواتین کو ایک تحریک چاہئے جو اُن کی امنگوں کی آواز بن سکے۔

متعلقہ

کانگریس کا فرض بنتا ہے کہ وہ یہ پلیٹ فارم فراہم کرے۔ انہوں نے زور دیا کہ پارٹی قائدین گھر گھر جائیں اور رکنیت سازی کریں۔مودی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس حکومت نے اداروں کو برباد کردیا تاکہ وہ جواب دہی سے بچ سکے۔ اس حکومت نے ہماری جمہوریت کی بنیادوں کو ہلادیا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.