کانگریس میں فیصلے کون کررہا ہے: کپل سبل

کپل سبل نے کہا کہ ہماری پارٹی میں کوئی صدر نہیں ہے۔ ہمیں پتہ نہیں فیصلے کون لے رہا ہے۔ ہمیں پتہ ہے پھر بھی ہمیں پتہ نہیں۔

نئی دہلی: سینئر کانگریس قائد کپل سبل نے چہارشنبہ کے دن راہول گاندھی پر تنقید کی۔ انہوں نے حیرت کا اظہار کیا کہ پارٹی میں فیصلے کون کررہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پارٹی قائدین نے تنظیمی انتخابات کا مطالبہ کیا تھا۔ گروپ 23 کے مکتوب کے ایک سال بعد بھی یہ مطالبہ پورا نہیں ہوا۔

نئی دہلی میں پریس کانفرنس سے خطاب میں کپل سبل نے کہا کہ ہماری پارٹی میں کوئی صدر نہیں ہے۔ ہمیں پتہ نہیں فیصلے کون لے رہا ہے۔ ہمیں پتہ ہے پھر بھی ہمیں پتہ نہیں۔

میرے ایک سینئر ساتھی نے شاید لکھا ہے یا کانگریس کی عبوری صدر کو لکھنے والا ہے کہ سی ڈبلیو سی اجلاس فوری طلب کیا جائے تاکہ بات چیت شروع ہو۔

انہوں نے کانگریس چھوڑکر جاچکے قائدین سے پارٹی میں واپس آجانے کی اپیل کی۔ اعلیٰ قیادت کے قریبی سمجھے جانے والے پارٹی چھوڑکر جاچکے ہیں اور جو قریبی نہیں سمجھے جاتے وہ آج بھی پارٹی کے ساتھ کھڑے ہیں۔ ہم گروپ 23 ہیں جی حضور 23 نہیں۔

پنجاب بحران کے حوالہ سے کپل سبل نے کہا کہ سرحدی ریاست جہاں یہ ہورہا ہے آئی ایس آئی اور پاکستان کے لئے فائدہ مند ہے کیونکہ سبھی کو پنجاب کی تاریخ اور انتہاپسندی زور پکڑنے کا علم ہے۔

کانگریس کو یقینی بنانا چاہئے کہ وہ ریاست کے مفادات کے تحفظ کے لئے متحد رہے۔ کپل سبل نے کہا کہ وہ ان کانگریس ارکان کی طرف سے بات کررہے ہیں جنہوں نے اگست 2020 میں مکتوب روانہ کیا تھا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.