یوگی حکومت پر ورون گاندھی کا ایک اور وار

ورون گاندھی کی جانب سے ٹویٹ کیا گیا جس میں اٹل بہاری واجپائی کو یہ کہتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے ”حکومت کو انتباہ دینا چاہتا ہوں‘ دبانے کاراستہ چھوڑدیں‘ کسانوں کو دھمکانے کی کوشش نہ کریں‘ وہ خوفزدہ نہیں ہیں۔

نئی دہلی: بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی) کے رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی نے جو کسانوں کے احتجاج اور لکھیم پور کھیری تشدد کے مسئلہ پر خود اپنی پارٹی کی حکومت کو مستقل طورپر نشانہ بناتے رہے ہیں‘ اب انہوں نے سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کا ایک پرانا ویڈیو پیش کیا ہے جس میں واجپائی اُس وقت کی کانگریس حکومت کو کسانوں کو دبانے کے خلاف انتباہ دیتے ہوئے دیکھے جاسکتے ہیں۔

 اس ویڈیو میں جو 1980 کا ہے‘ ورون گاندھی کی جانب سے ٹویٹ کیا گیا جس میں اٹل بہاری واجپائی کو یہ کہتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے ”حکومت کو انتباہ دینا چاہتا ہوں‘ دبانے کاراستہ چھوڑدیں‘ کسانوں کو دھمکانے کی کوشش نہ کریں‘ وہ خوفزدہ نہیں ہیں۔ ہم پارٹی سیاست کے لئے کسانوں کی تحریک کو استعمال کرنا نہیں چاہتے لیکن ہم کسانوں کے حق بجانب مطالبات کی تائید کرتے ہیں اور اگر حکومت انہیں دباتی یا کچلتی ہے‘ قانون کا بے جا استعمال کرتی ہے‘ پرامن تحریک کو کچلنے کی کوشش کرتی ہے تو ہم ان کی جدوجہد میں شامل ہونے سے گریز نہیں کریں گے۔ ہم ان کے ساتھ شانہ بہ شانہ کھڑے ہیں“۔

 ورون گاندھی نے کیپشن لکھا ”ایک فراخدل قائد کے دانشورانہ کلمات“۔ واضح رہے کہ ورون گاندھی پارٹی لائن سے انحراف کرتے ہوئے مسلسل چیف منسٹر اترپردیش یوگی آدتیہ ناتھ کے خلاف مکتوب تحریر کرتے ہوئے یا ٹویٹ کرتے ہوئے اپنا نقطہ ئ نظر پیش کرتے رہے ہیں۔

 قبل ازیں ورون گاندھی نے 3  اکتوبر کو لکھیم پور کھیری میں کسانوں کوہلاک کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔ واضح رہے کہ ورون گاندھی اور ان کی ماں منیکا گاندھی کو حال ہی میں بی جے پی کی قومی عاملہ سے خارج کردیا گیا ہے جس سے یہ اشارہ ملتا ہے کہ پارٹی قیادت ان سے خوش نہیں ہے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.