ارتھی جلوس : مغربی بنگال میں سڑک حادثہ، 18 افراد ہلاک

چیف منسٹر ممتابنرجی، گورنر جگدیپ دھنکر کے علاوہ وزیراعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے انسانی جانوں کے تلف ہونے پر دکھ ظاہر کیا۔

کولکتہ: ارتھی جلوس کے دوران کم ازکم 18 افراد اس وقت ہلاک ہوگئے جب ارتھی لے جانے والی گاڑی سڑک پر ٹھہرے ٹرک سے ٹکراگئی۔

یہ حادثہ مغربی بنگال کے ضلع ناڈیہ میں اتوار کی صبح پیش آیا۔ ایک پولیس عہدیدار نے یہ بات بتائی۔

مرنے والوں میں ایک بچہ اور 6 عورتیں شامل ہیں۔ ایک مِنی ٹرک جس میں 35 سے زائد افراد سفر کررہے تھے‘ کل رات لگ بھگ 3 بجے اسٹیٹ ہائی وے پر سڑک کنارے پارک ٹرک سے ٹکرا گیا جس میں پتھر لدے تھے۔

12 افراد برسرموقع ہلاک ہوئے جبکہ 6 نے دواخانہ لے جانے کے دوران یا علاج کے دوران دم توڑا۔

مقامی افراد اور پولیس نے زخمیوں کو شکتی نگر جنرل ہاسپٹل پہنچایا۔ ڈاکٹروں نے بعدمعائنہ ان زخمیوں کو جن کی حالت نازک ہے‘ کرشنا نگر کے ایک اور دواخانہ بھیج دیا۔

پولیس عہدیدار کے بموجب کہر کی وجہ سے راستہ دکھائی نہ دینا‘ حادثہ کی وجہ ہوسکتا ہے۔

ایک زخمی نے بتایا کہ وہ اور دوسرے لوگ نبادویپ کریمیشن گراؤنڈ جارہے تھے۔

چیف منسٹر ممتابنرجی‘ گورنر جگدیپ دھنکر کے علاوہ وزیراعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے انسانی جانوں کے تلف ہونے پر دکھ ظاہر کیا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.