اکھلیش کو شیوپال یادو کا ایک ہفتہ کا الٹی میٹم

شیوپال یادو نے کہاکہ اتحاد میں طاقت ہوتی ہے۔ ہم اپنے حامیوں کے لئے 100 نشستیں چاہتے ہیں لیکن اب ہم جھک گئے ہیں۔ یہ کہتے ہوئے 2 سال بیت گئے لیکن کچھ بھی طئے نہیں پایا۔ ہم انضمام کے لئے تیار ہیں۔

لکھنو: صدر پرگتی شیل سماج وادی پارٹی (پی ایس پی ایل) شیوپال یادو نے اپنے بھتیجہ اور سماج وادی پارٹی صدر اکھلیش یادو کو اتحاد یا انضمام کے فیصلہ کے لئے ایک ہفتہ کا الٹی میٹم دیا ہے۔ انہوں نے میڈیا نمائندوں سے کہا کہ ہم اپنی پارٹی کو سماج وادی پارٹی میں ضم کرنے کے لئے تیار ہیں۔ ایک ہفتہ میں یہ نہ ہوا تو ہم لکھنو میں کانفرنس کریں گے اور اپنے لوگوں سے صلاح و مشورہ کے بعد فیصلہ کریں گے۔

شیوپال یادو نے پیر کی رات لکھنو میں سماج وادی پارٹی کے سرپرست ملائم سنگھ یادو سے ملاقات کی۔ سمجھا جاتا ہے کہ انہوں نے ان سے اس مسئلہ پر بات چیت کی۔ شیوپال یادو نے کہا کہ ہماری ترجیح‘ سماج وادی پارٹی کے ساتھ اتحاد ہے۔ نیتاجی(ملائم سنگھ یادو) کی سالگرہ پر ساری ریاست کے عوام اتحاد کی امید رکھتے ہیں‘ جو بھی ہونا ہے وہ جلد ہوجائے۔ نیتاجی نے ہمیں نہ صرف کشتی بلکہ سیاست کے گر بھی سکھائے۔

 اتحاد میں طاقت ہوتی ہے۔ ہم اپنے حامیوں کے لئے 100 نشستیں چاہتے ہیں لیکن اب ہم جھک گئے ہیں۔ یہ کہتے ہوئے 2 سال بیت گئے لیکن کچھ بھی طئے نہیں پایا۔ ہم انضمام کے لئے تیار ہیں‘ وقت گزرتا جارہا ہے‘ فیصلہ جلد ہونا چاہئے۔ پی ایس پی ایل سربراہ نے کہا کہ انہوں نے ہمیشہ قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ چاہتے تو 2003میں چیف منسٹر بن سکتے تھے لیکن انہوں نے نیتاجی کو دہلی سے بلایا اور انہیں چیف منسٹر بنایا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.