ایودھیا میں سلسلہ وار بم دھماکوں کی دھمکی

اس کال میں شہر ایودھیا میں سلسلہ وار بم دھماکے اور زیر تعمیر رام مندر میں بم دھماکہ کی دھمکی دی گئی۔ بابری مسجد کی 6دسمبر کو برسی کے پیش نظر مقامی پولیس پہلے ہی چوکس ہے۔

لکھنؤ: ضلع ایودھیا میں سکیورٹی انتظامات بڑھادیئے گئے ہیں کیونکہ ایمرجنسی نمبر 112 پر ایک دھمکی آمیز کال موصول ہوا تھا۔ اس کال میں شہر ایودھیا میں سلسلہ وار بم دھماکے اور زیر تعمیر رام مندر میں بم دھماکہ کی دھمکی دی گئی۔ بابری مسجد کی 6دسمبر کو برسی کے پیش نظر مقامی پولیس پہلے ہی چوکس ہے۔

ایودھیا ضلع کے ایک سینئر پولیس عہدیدار نے دھمکی آمیز فون کال موصول ہونے کی توثیق کی اور کہا کہ فون کرنے والے کا پتہ چلایا جارہا ہے۔ وہ گجرات کے احمد آباد کا نوجوان ہے اور اسے ڈھونڈنے کی کوششیں جاری ہیں۔ دوسری طرف ڈائیل 112 کے ایک سینئر عہدیدار نے تاہم ایسی کسی دھمکی آمیز کال کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ 6 دسمبر کو بابری مسجد کی برسی کے پیش نظر یہاں کی سکیورٹی میں اضافہ کیا گیا ہے۔

دھمکی آمیز کال جیسے ہی موصول ہوا ایودھیا میں اہم مقامات پر سکیورٹی بڑھادی گئی اور پہلے سے تعینات سکیورٹی کا جائزہ بھی لیا گیا تاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کی روک تھام ہوسکے۔ لکھنؤ کے ڈی جی پی ہیڈکوارٹرس کے ایک اعلیٰ پولیس عہدیدار نے انکشاف کیا کہ نا معلوم کالر کی دھمکی کے بعد ہم نے سکیورٹی انتظامات کا دوبارہ جائزہ لیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ فون کرنے والے نے شہر ایودھیا میں سلسلہ وار بم دھماکے کرنے کی دھمکی دی، اس کے علاوہ رام جنم بھومی پر دھماکہ کرنے کی بات کہی۔ اس کے بعد ضلع کے تمام آمد و رفت کے راستوں پر سکیورٹی بڑھادی گئی۔ ریلوے اسٹیشنوں، بس اسٹانڈس پر زائد فورسس تعینات کردی گئی ہیں۔

مقامی پولیس کو ضلع کے تمام ہوٹلوں اور دھرم شالوں میں قیام کرنے والوں پر نظر رکھنے کی ہدایت دی گئی ہے اس کے علاوہ ہوٹلوں کی تلاشیاں لینے کا حکم دیا گیا ہے۔ دوسری طرف شہر میں داخل ہونے والی ہر ایک گاڑی سختی سے تلاشی لی جارہی ہے اور بم اسکواڈس اور ڈاگ اسکواڈس کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔

اعلیٰ پولیس عہدیدار نے یہ بھی بتایا کہ رام جنم بھومی کامپلکس پر حفاظت پر تعینات دستہ کو ہٹاکر وہاں بلاک کیاٹ کمانڈوز کو تعینات کردیا گیا ہے۔ ایودھیا پولیس نے سنٹرل آرمڈ پولیس فورس کے ہمراہ شہر میں فلیگ مارچ بھی کیا۔

ذریعہ
ایجنسیز

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.