بھارت ماتا کی جئے پر ہندو۔ مسلم طلبا میں جھگڑا

ایک اور پولیس عہدیدار کے بموجب اسکول میں پریر کے بعد بچے قومی ترانہ پڑھتے ہیں اور بھارت ماتا کی جئے کا نعرہ لگاتے ہیں۔ بعض مسلمان بچے بھارت ماتا کی جئے کا نعرہ نہیں لگارہے تھے۔

بھوپال: مدھیہ پردیش کے ضلع اگرمالوہ کے ایک اسکول میں بھارت ماتا کی جئے کے نعرہ پر جھگڑے میں ایک طالب علم اور ایک ٹیچر کو مبینہ مارپیٹ کی گئی۔ پولیس نے چہارشنبہ کے دن یہ بات بتائی۔ ریاستی دارالحکومت بھوپال سے لگ بھگ 175کیلو میٹر دور واقع برڈ ٹاؤن میں منگل کے دن پیش آئے اس واقعہ کے بعد لگ بھگ 20  افراد کے خلاف کیس درج کیا گیا۔

سپرنٹنڈنٹ پولیس اگرمالوہ راکیش ساگر نے چہارشنبہ کے دن فون پر پی ٹی آئی کو بتایا کہ خانگی اسکول میں مختلف فرقوں کے بچے پڑھتے ہیں۔ بھارت ماتا کی جئے کا نعرہ لگانے کے مسئلہ پر طلبا میں جھگڑا ہوا لیکن معاملہ سلجھ گیا تھا۔ بعد میں بعض طلبا نے اسکول کے باہر چند لڑکوں کو مبینہ مارپیٹ کی۔ ایک اور پولیس عہدیدار کے بموجب اسکول میں پریر کے بعد بچے قومی ترانہ پڑھتے ہیں اور بھارت ماتا کی جئے کا نعرہ لگاتے ہیں۔ بعض مسلمان بچے بھارت ماتا کی جئے کا نعرہ نہیں لگارہے تھے۔

 12 ویں جماعت کے بھرت سنگھ راجپوت (19 سالہ) نے اس پر اعتراض کیا جس پر جھگڑا ہوا۔ اس نے بعدازاں پولیس میں شکایت کی کہ منگل کے دن وہ اور دیگر لڑکے اسکول سے گھر واپس جارہے تھے کہ اسے اور ایک ٹیچر کو روکا گیا اور مارپیٹ کی گئی۔

 ایف آئی آر کے بموجب راجپوت کا دعویٰ ہے کہ بعض مسلم لڑکوں اور ان کے دوستوں نے اسے‘ دیگر لڑکوں اور درج فہرست ذات کے ٹیچر کو قصائی محلہ میں روک لیا۔ ملزمین نے گالیاں دیں اور کہا کہ ہم سے نعرہ لگوانے والے تم کون ہوتے ہو۔ ٹیچر نے جب اپنے موبائل پر واقعہ کی ویڈیو بنانی شروع کی تو ملزمین نے اسے بھی لاٹھیوں سے مارا اور اس کا فون توڑدیا۔

سپرنٹنڈنٹ پولیس راکیش ساگر کا تاہم کہنا ہے کہ یہ قانونی سے زیادہ باقاعدہ کونسلنگ اور رہنمائی کا مسئلہ ہے کیونکہ یہ سبھی بچے اسکولی طلبا ہیں۔ ٹیچرس اور پرنسپل کو چاہئے کہ وہ طلبا کو اخلاقیات کا درس دیں۔ ایک اور عہدیدار نے بتایا کہ راجپوت کی شکایت پر 9  نامزد افراد اور 9-10 نامعلوم افراد کے خلاف کیس درج کیاگیا۔ بعض کو پوچھ تاچھ کے لئے حراست میں لیا گیا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.