بی جے پی کو شکست کیلئے کسی بھی پارٹی سے اتحاد ممکن: اکھلیش

اکھلیش نے بتایا کہ اسمبلی انتخابات کیلئے ایس پی کے امیدواروں کے انتخاب کا کام جلد ہی شروع کردیا جائے گا۔ امیدواروں پر رائے لینے کیلئے پارٹی کے تمام ضلع صدور و اسمبلی حلقہ صدور کی میٹنگ آئندہ ہفتہ طلب کی گئی ہے۔

مہوبہ: سماج وادی پارٹی صدر اکھلیش یادو نے جمعرات کو کہا کہ آنے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو شکست کے لئے ان کی پارٹی کو کسی بھی دوسری پارٹی سے سمجھوتہ کرنے میں کوئی گریز نہیں ہے۔ حالانکہ اے آئی ایم آئی ایم سے دوری بنائے رکھنے کی انہوں نے وضاحت کی۔ بندیل کھنڈ میں 3 دن کے انتخابی مہم پر نکلے ایس پی سپریمو نے آج للت پور کے لئے روانہ ہونے سے پہلے میڈیا نمائندوں کے ساتھ بات چیت میں کہا کہ بی جے پی کو ٹکر دینے کے لئے سماج وادی پارٹی کے ذریعہ یکساں نظریات والی مختلف سیاسی پارٹیوں سے اتحاد کر کے ایک بڑا مورچہ تیار کیا جارہا ہے۔ جس میں زیادہ تر پارٹیوں کی شراکت داری ہوچکی ہے۔

چچا شیوپال کی پارٹی سمیت دیگر پارٹیوں کو بھی جلد ہی ساتھ لے کر اسے آخری شکل دی جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ متحدہ مورچہ سے اسدالدین اویسی کو اے آئی ایم آئی ایم کو دور رکھا گیا ہے۔ سماج وادی پارٹی نے اس سے کسی بھی قسم کا اتحاد نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ایس پی سربراہ نے بتایا کہ اسمبلی انتخابات کے لئے سماج وادی پارٹی کے امیدواروں کے انتخاب کا کام جلد ہی شروع کردیا جائے گا۔ امیدواروں پر رائے لینے کے لئے پارٹی کے تمام ضلع صدور و اسمبلی حلقہ صدور کی میٹنگ آئندہ ہفتہ طلب کی گئی ہے۔

 ایس پی سے ٹکٹ عوامی رابطہ رکھنے والے محنتی و ایماندار امیدوار کو دیا جائے گا۔ انہوں نے یوپی کے ڈپٹی چیف منسٹر کیشوپرساد موریہ کے ذریعہ متھرا کی کرشن جنم بھومی کے سیاق میں دئیے گئے بیان پر کہا کہ بی جے پی لیڈروں کو انتخاب میں ہار ملتی دکھ رہی ہے اس کی وجہ سے وہ حواس باختہ ہیں اور بے بنیاد بیانات دے رہے ہیں۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.