بی جے پی کے بھی ”خراب دن“ شروع ہوگئے: مایاوتی

کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی جانب سے اقتدار حاصل کرنے پر 12ویں اور گریجویشن میں زیرتعلیم طالبات کو اسمارٹ فونس اور الیکٹرک اسکوٹی فراہم کرنے کے اعلان کے ایک دن بعد صدر بی ایس پی نے کہا کہ کیونکر کوئی ان وعدوں پر بھروسہ کرسکتا ہے۔

لکھنؤ: بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سربراہ مایاوتی نے آج خوش کن انتخابی وعدوں کے لیے کانگریس پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اپنے وعدوں کی عدمِ تکمیل سے وہ ”برے دنوں“ کا سامنا کررہی ہے اور دعویٰ کی کہ پارٹی پر عوام کا اعتماد ختم ہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی کو بھی ایسے ہی حالات کا سامنا ہے جیسے کانگریس کو درپیش ہے، کیوں کہ وہ بھی عوام سے کیے گئے وعدوں کی تکمیل میں ناکام رہی ہے۔

کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی جانب سے اقتدار حاصل کرنے پر 12ویں اور گریجویشن میں زیرتعلیم طالبات کو اسمارٹ فونس اور الیکٹرک اسکوٹی فراہم کرنے کے اعلان کے ایک دن بعد صدر بی ایس پی نے کہا کہ کیونکر کوئی ان وعدوں پر بھروسہ کرسکتا ہے۔

ہندی میں تحریر کردہ سلسلہ وار ٹوئٹر پیامات میں بی ایس پی صدر نے کہا کہ کانگریس بھی بی جے پی کی طرح کئی خوش کن وعدے کررہی ہے اور ایس پی انتخابی شعبدہ بازی کے تحت وعدے کررہی ہے، لیکن بنیادی سوال یہ ہے کہ کون اور کیسے ان پر بھروسہ کریں گے۔

یہ دریافت کرتے ہوئے کہ بعض ریاستوں میں کانگریس پارٹی کی حکومتیں وعدوں کی تکمیل کے لیے کیا کچھ کی ہیں مایا وتی نے کہا کہ راجستھان اور پنجاب میں کانگریس کی حکومتیں ہیں۔ کیا وہ حکومتیں وہاں ایسا کچھ کی ہیں؟ اگر نہیں کی ہیں تو کیونکر عوام ان پر بھروسہ کریں گے؟

اسی وجہ سے کانگریس اور بی جے پی جیسی پارٹیوں پر ان کے وعدوں اور دعووں پر اعتماد بالکل نہیں ہے۔ مایا وتی نے یہ بھی کہا کہ دھوکہ دہی اور وعدوں کی عدمِ تکمیل سے کانگریس کو برے دن دیکھنا پڑ رہا ہے اور ان ہی اسباب کے سبب بی جے پی کے بھی برے دن شروع ہوگئے ہیں۔ عوام پر مہنگائی، غربت، بے روزگاری وغیرہ کا بوجھ ڈالنے بی جے پی کو بھی نقصان اٹھانا پڑے گا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.