حکومت گجرات‘ شادی کے ذریعہ دھرم پریورتن روکنے پر اٹل

میڈیا سے بات چیت میں وجئے روپانی نے کہا کہ ریاستی حکومت اپنے موقف پر اٹل ہے۔ ہندو لڑکیوں کو بھگایا جارہا ہے اور بعدازاں ان کا مذہب تبدیل کیا جارہا ہے۔ لوجہاد کا قانون اسی تناظر میں بنا تھا۔ ریاستی حکومت یقیناً سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی۔

احمدآباد: چیف منسٹر گجرات وجئے روپانی نے ہفتہ کے دن کہا کہ ریاستی حکومت شادی کے ذریعہ زبردستی دھرم پریورتن (تبدیلی مذہب) کو روکنے پر اٹل ہے۔

وہ گجرات ہائی کورٹ کے احکام کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی۔

گجرات ہائی کورٹ نے 19 اگست کو گجرات آزادی مذہب(ترمیمی) قانون 2021 کی بعض دفعات پر روک لگادی تھی۔

میڈیا سے بات چیت میں وجئے روپانی نے کہا کہ ریاستی حکومت اپنے موقف پر اٹل ہے۔ ہندو لڑکیوں کو بھگایا جارہا ہے اور بعدازاں ان کا مذہب تبدیل کیا جارہا ہے۔ لوجہاد کا قانون اسی تناظر میں بنا تھا۔ ریاستی حکومت یقیناً سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.