رام رحیم سنگھ اور دیگر 4 کو قتل کیس میں سزائے عمر قید

ہریانہ کے پنچ کلامیں واقع خصوصی عدالت نے ڈیرا کے سربراہ اوردیگر4 افراد کرشن لال، جسبیر سنگھ، اوتارسنگھ اور سبدیل کو 8 اکتوبر 2002 کے قتل کیس میں قصور وار قرارد یاگیاہے۔

چندی گڑھ: ڈیرا سچاسوداکے سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ اوردیگر4افراد کوسی بی آئی کی خصوصی عدالت نے2002میں ڈیرا کے منیجررنجیت سنگھ کے قتل کے لئے سزائے عمرقید سنائی۔

رام رحیم سنگھ کو دو ششکوں کی عصمت ریزی پر 20 سال کی جیل کی سزا سنائی گئی تھی انہیں فی الحال روہتک کی سونالیہ جیل میں رکھا گیاہے۔

ہریانہ کے پنچ کلامیں واقع خصوصی عدالت نے ڈیرا کے سربراہ اوردیگر4 افراد کرشن لال، جسبیر سنگھ، اوتارسنگھ اور سبدیل کو 8 اکتوبر 2002 کے قتل کیس میں قصور وار قرارد یاگیاہے۔

عدالت نے ان پانچوں کو سزائے عمرقید سنائی ہے۔ سی بی آئی کے خصوصی وکیل ایچ پی ایس ورمانے سخت سکیوریٹی کے درمیان منعقدہ سماعت کے بعد یہ بات بتائی۔ سی بی آئی نے انہیں سزائے موت دینے کی اپیل کی تھی۔

ورمانے کہاکہ ڈیراکے سربراہ پر31لاکھ روپے کاجرمانہ بھی عائد کیاہے جس کی آدھی رقم متاثرہ کے خاندان کومعاوضہ کے طورپر ادا کی جائے گی۔

اس فیصلہ پرردعمل ظاہرکرتے ہوئے رنجیت سنگھ کے فرزند جگسیرسنگھ نے کہاکہ خاندان کے لئے آج کا دن ایک بڑا دن ہے کیونکہ ہمیں طویل عرصہ کے بعد انصاف ملاہے۔

خیال رہے کہ ڈیرا کے سربراہ بابا رام رحیم کے پیرو بہت بڑی تعدادمیں موجود ہیں۔ رام رحیم سنگھ مسلسل تنازعات میں رہے ہیں۔

2017 میں عصمت ریزی کے ایک کیس میں انہیں خاطی قراردیئے جانے کے بعد ان کے حامیوں نے زبردست تشددبرپا کیا تھا۔ پولیس نے سماعت سے قبل پنچ کلا اور سرسہ میں جہاں ڈیرہ سچا سودا کے دفاتر واقع ہیں سکیوریٹی بڑھادی ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.