لکھم پور کھیری میں تشدد‘ کسانوں پر نامعلوم افراد کی فائرنگ

برہم کسانوں نے ڈپٹی چیف منسٹر کیلئے لگائی گئی خیرمقدمی کمانوں کو اکھاڑ پھینکا۔ علاقہ میں بھاری پولیس فورس تعینات کردی گئی۔

لکھم پورکھیری(یوپی): زرعی قوانین کے خلاف احتجاج پُر تشدد ہوگیا۔ نامعلوم افراد نے کسانوں پر گولیاں چلادیں۔ کئی افراد زخمی ہوئے اور تین گاڑیوں کو آگ لگا دی گئی۔ برہم کاشتکاروں نے 3جیپوں کو آگ لگادی کیونکہ بعض احتجاجیوں کو گاڑیوں نے روند ڈالا تھا۔

 ایک گاڑی مرکزی مملکتی وزیر داخلہ اجئے مشرا تینی کے لڑکے آشیش مشرا کی ہے۔ قبل ازیں ہزاروں کسانوں نے تکونیا کی طرف مارچ کیا۔ انہوں نے حکومت اترپردیش کے خلاف احتجاج کیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر کیشو پرساد موریا ایک پروگرام میں شرکت کیلئے موضع بنویر آنے والے تھے تاہم کسانوں نے مہاراجہ اگرسین اسپورٹس گراؤنڈ پر بنے ہیلی پیڈ پر قبضہ کرلیا۔

ڈپٹی چیف منسٹر کو اپنا پروگرام تبدیل کرکے ذریعہ سڑک لکھنو سے لکھم پور پہونچنا پڑا۔ برہم کسانوں نے ڈپٹی چیف منسٹر کیلئے لگائی گئی خیرمقدمی کمانوں کو اکھاڑ پھینکا۔ علاقہ میں بھاری پولیس فورس تعینات کردی گئی۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.